پاکستان نے فوج بھیجنے کا فیصلہ کیا تو اس کی مخالفت کرینگے،الطاف حسین

ویب ایڈیٹر :

لندن / کراچی : ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کا کہنا ہے کہ یمن جنگ میں پاکستان فوج حصہ بننی تو تباہ ہو جائے گی، جنگ کا حصہ بننے پر یمن اور سعودیہ تو قائم رہے گا مگر پاکستان تباہ ہو جائے گا، انہوں نے یمن فوج بھیجنے سے متعلق پارٹی مؤقف سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ  جنگ میں حصہ لینے سے پاکستان کے ادارے تباہ ہوجائیں گے، پاکستانی فوج کو یمن بھیجا  گیا تو اس کی مخالفت کریں گے۔

سماء سے خصوصی گفت گو کرتے ہوئے ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین  نے واضح الفاظ میں یمن کے مسئلے پر پارٹی مؤقف سامنے رکھتے  ہوئے کہا کہ  پاکستانی فوج کو یمن بھیجا گیا تو اس کی مخالفت کریں گے، جنگ میں حصہ لینے سے پاکستان کے ادارے تباہ ہو جائیں گے، جنگ میں دونوں ممالک کی بربادی دیکھ رہا ہوں، اس جنگ میں پاک افواج کو جھونکا گیا تو یمن اور سعودیہ تو قائم رہیں گے مگر پاکستان اور اس کی فوج تباہ ہو جائے گی۔

قائد تحریک الطاف حسین کا مزید کہنا تھا کہ  اس یمن فوج بھیجنے سے متعلق مولانا فضل الرحمان سے ٹیلی فون پر رابطہ بھی کیا، ان سے درخواست کی کہ خدا کیلئے ملک کو بچائیں،مولانا فضل الرحمان نے ہمارے مؤقف کی تائید کی ہے، جنگ میں فوج حصہ دار بنی تو تباہ ہوجائے گی۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اوریمن میں محاذآرائی چل رہی ہے، یمن تنازع مسلمانوں اور خطےکیلئےاچھانہیں، جنگ سےدونوں ممالک کی افواج اور معیشت تباہ ہوگی، کچھ لوگ یمن جنگ کو مذہبی رنگ دے رہے ہیں، کیاسعودیہ میں بحیثیت مسلمان زندگی گزارنےدیاجاتاہے؟ جنگ میں دونوں ممالک کی بربادی دیکھ رہاہوں، پاکستان اس مسئلے سے دور رہے اور پر امن طریقے سے مسئلے کے حل پر زور دے۔ سماء

کی

کا

نے

registered

فیصلہ

sargodha

Obama

Tabool ads will show in this div