بلاول بھٹو کی عمران خان اور نواز شریف پر کڑی تنقید

Aug 19, 2017
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/08/BILAWAL-1800-SOT-19-08.mp4"][/video]

مانسہرہ : پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے مانسہرہ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان اور سابق وزیر اعظم نواز شریف پر کڑی تنقید کر ڈالی ۔

مانسہرہ میں بلاول بھٹو زرداری نے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ميں اس دھرتي پر ہوں جہاں کے لوگوں نے قيام پاکستان ميں اہم کردار ادا کيا ، جب بھي حکومت ميں آئے اس علاقے کے لئے بہت کچھ کيا ، ہم نے آپکي خدمت کي ہے ، ہر شعبے ميں کام کيا ، تاکہ آپ کا معيار زندگي بہتر ہو،عوام کي خوشحالي ہي ہمارا منشور ہے ، ہم چاہتے ہيں کہ سب کو ترقي کے يکساں مواقع مليں ۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ ذوالفقار بھٹو نے مانسہرہ ڈويژن بنايا ، بي بي شہيد نے مزيد دو اضلاع کا اضافہ کيا ، پيپلز پارٹي نے صوبے ميں کئي ترقياتي منصوبے مکمل کئے، ہزارہ کي دھرتي پر سيکڑوں اسکول و کالجز بنائے ۔

بلاول بھٹو نے چيئرمين پي ٹي آئي پر کڑي تنقيد کی کہا کہ بيگم نصرت بھٹو کينسر پروگرام بھي ہم نے شروع کيا ليکن خان صاحب کي حکومت نے يہ پروگرام بند کر ديا، خان صاحب ، يہ غريبوں کا پروگرام تھا، اگر اعتراض ہے تو اس پروگرام کو بھي شوکت خانم کا نام دے دو۔

ان کا کہنا تھا کہ ہميں پتہ ہے کيا تبديلي آئي ہے ، انہوں نے صحت اور تعليم کا شعبہ تباہ کر ديا ،ان کا دعويٰ ہے کہ سرکاري اسکولوں ميں ايک لاکھ بچے آئے ،رواں سال سرکاري اسکول کے بچوں نے ايک بھي پوزيشن نہيں لي ، مگر ان کے نجي اسکول ترقي کر رہے ہيں، خان صاحب جھوٹ پر جھوٹ بول رہے ہيں۔،

بلاول بھٹو نے کہا کہ پاکستان کي تاريخ ميں پہلي بار منسٹر کو گرفتار کرنے کا دعويٰ کيا، يہ تو بتائيں اس بے چارے منسٹر نے آپ کے وزيراعليٰ پر کيا الزامات لگائے، مائنز کے شعبے ميں کرپشن کي تحقيقات کب ہوگي، آپ کے وزير ہي کہتے ہيں ٹھيکوں سے آپ کا کچن چل رہا ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ نوجوانوں کو روزگار نہيں مل رہا ، دہشتگردي کم کرنے کا صلہ بھي اپنے سر لے رہے ہيں ، خان صاحب نے دہشتگردوں کي کبھي مذمت نہيں کي ، آپ نے دہشتگردوں کو اپنا بھٹکا ہوا بھائي قرار ديا تھا ، پوليس اور سيکورٹي اہل کاروں کي قربانيوں سے دہشتگردي ختم ہوئي ، اب الزامات کي سياست نہيں چلے گي ،آپ نے صوبے لئے کچھ نہيں کيا ،دوہزار اٹھارہ کا اليکشن ميرا پہلا اور خان صاحب کا آخري اليکشن ہوگا۔

سابق وزیر اعظم پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ آپ نے جي ٹي روڈ پر مياں صاحب کا چيخنا چلانا ديکھا ہوگا، آج مياں صاحب انقلاب کا نعرہ لگا رہے ہيں، مياں صاحب جتنا چاہيں چيخيں عوام جھانسے ميں نہيں آئيں گے ، مياں صاحب آپ نے عوام کي دولت لوٹي ، اب پوچھتے ہيں کيوں نکالا گيا ، مياں صاحب آپ کو معلوم بھي ہے انقلاب کيا ہوتا ہے ۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ آپ نے چھانگا مانگا کي سياست شروع کي ، آپ نے بي بي کي حکومت گرانے کے لئے اسامہ بن لادن سے پيسہ ليا ، جب جب کرسي کو خطرہ ہوا آپ نے پارليمنٹ کا سہارا ليا ، آپ کي غلط معاشي پاليسيوں سے غريب غريب تر ہوتا گيا ، ان حکم رانوں نے ملک کو قرضوں کے جال ميں پھنسا ديا ، ايک طرف مياں صاحب سڑکوں پر آنے کي دھمکياں دے رہے ہيں ، ن ليگ اور پي ٹي آئي صرف اقتدار کي جنگ ميں مصروف ہيں۔ سماء

PTI

ZARDARI

IMRAN KHAN

PML N

BILAWAL BHUTTO

Nawaz Shariff

Tabool ads will show in this div