میگا کرپشن میں ملوث مشتاق رئیسانی ننھے کاکے بن گئے

Aug 17, 2017

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/08/Raisani-Anookha-Bayan-Qta-Pkg-17-08.mp4"][/video]

کوئٹہ : بلوچستان میگا کرپشن کے ماسٹر مائنڈ ننھے کاکے بن گئے، مشتاق رئیسانی کہتے ہیں کہ گھر سے ملنے والے 70 کروڑ روپے فلاحی کاموں کیلئے رکھے تھے، مسجد بھی بنوانی تھی۔

محکمہ خزانہ اور بلدیات کے ترقیاتی فنڈز میں 2 ارب روپے سے زائد کی کرپشن میں گرفتار مشتاق رئیسانی کے گھر سے گزشتہ سال 70 کروڑ روپے سے زائد کی پاکستانی و غیر ملکی کرنسی، زیورات اور پرائز بونڈ برآمد ہوئے تھے۔

مشتاق رئیسانی نے بلوچستان ہائی کورٹ میں دائر کی گئی درخواست ضمانت میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ یہ رقم مخیر افراد نے مساجد، اسپتالوں اور اسکولوں کی تعمیر سمیت خیرات اور فلاحی کاموں کیلئے رکھوائی تھی اور وہ ان مخیر حضرات کو عدالت کے سامنے پیش کرنے کیلئے بھی تیار ہیں۔

نیب نے سابق سیکریٹری خزانہ کا مؤقف مسترد کرتے ہوئے اپنا جواب عدالت میں داخل کرادیا، نیب کے مطابق ملزم نے محض خود کو بچانے کیلئے نئی کہانی گھڑی ہے۔

نیب کے مطابق مشتاق رئیسانی کی جانب سے پیش ہونیوالے مخیر افراد کو شامل تفتیش کرکے ذرائع آمدن، ٹیکسز کی ادائیگی کی چھان بین کی جائے گی۔ عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد درخواست ضمانت پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔ سماء

mega corruption

Mushtaq raisani

Tabool ads will show in this div