شاہد خاقان عباسی نئے وزیراعظم منتخب

Shahid Khaqan 1700 sot 31-07

اسلام آباد:  شاہد خاقان عباسی وزیراعظم پاکستان منتخب ہوگئے، قومی اسمبلی میں ہونے والے انتخاب کے دوران انہوں نے 221 ووٹ حاصل کئے، قائد ایوان کے انتخاب کیلئے شاہد خاقان عباسی، شیخ رشید، نوید قمر اور طارق اللہ کے درمیان مقابلہ تھا۔

سابق وزیراعظم نواز شریف کی پاناما کیس میں نااہلی کے بعد نئے وزیراعظم کیلئے قومی اسمبلی میں انتخابات کا انعقاد کیا گیا، قائد ایوان بننے کے لیے342 میں سے 172 ووٹ درکار تھے۔ مسلم لیگ نواز کے شاہد خاقان عباسی  221 ووٹ کے ساتھ وزیراعظم پاکستان منتخب ہوگئے، ان کے مقابلے میں پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے 33 ووٹ، پیپلزپارٹی کے سید نوید قمر نے47 جبکہ جماعت اسلامی کے صاحبزادہ طارق اللہ نے 4 ووٹ حاصل کئے۔

مزید جانیے : منتخب وزیراعظم شاہدخاقان نےپہلےخطاب میں دل جیت لئے

شاہد خاقان کے سامنے اپوزیشن جماعتیں مشترکا امیدوار لانے میں ناکام ہوگئیں، جب کہ پیپلز پارٹی نے عمران خان کے امیدوار شیخ رشید کی حمایت کرنے سے انکار کرتے ہوئے نوید قمر کو امیدوار بنادیا۔ایم کیو ایم کی جانب سے شاہدخاقان عباسی کی حمایت کی گئی۔

قومی اسمبلی کی نشستوں پر نظر ڈالی جائے تو اسمبلی میں کل نشستیں 342ہیں۔ وزیراعظم بننے کیلئے امیدوار کو 172 ووٹ درکار ہوتے ییں ۔ایوان میں پاکستان مسلم لیگ ن کی 188 نشتیں، پاکستان پیپلزپارٹی کی 47، پی ٹی آئی 37، ایم کیو ایم 24، جے یو آئی ف کی 13، پاکستان مسلم لیگ فنکشنل کی پانچ، جماعت اسلامی کی چار، پختونخوا میپ کی تین، این پی پی دو، پاکستان مسلم لیگ ق اور اے این پی کی دو دو، کیو ڈبلیو پی،  این پی، بی این پی اور پی ایم ایل زیڈ کی ایک ایک اور دیگر تین نشستیں شامل ہیں۔

ایوان میں وزیراعظم کے انتخاب کیلئے ووٹنگ سے قبل لابی میں پانچ منٹ تک گھنٹیاں بجائی جائیں گئیں تاکہ اراکین ایوان میں پہنچ جائیں۔ ووٹنگ کے دوران کسی بھی رکن کو ایوان میں آنے کی یا باہر جانے کی اجازت نہیں تھے۔ اسپیکر کی جانب سے ووٹنگ کے طریقہ کار کا اعلان کیا گیا۔

مزید دیکھیں : شیخ رشید احمد کی شاہد خاقان عباسی کو مبارک باد

وزیراعظم کیلئے ووٹنگ کا طریقہ کار اور انتخاب خفیہ رائے سے کیاگیا۔حکومت اور اپوزیشن کیلئے علیحدہ علیحدہ بیلٹ باکس رکھے گئے۔ اراکین کے ایوان میں پہنچنے کے بعد ایوان کے دروازے بند کردیئےگئے۔اسپیکر کی جانب سے تمام اراکین کے نام ایک ایک کرکے حرف تہجی کے اعتبار سے پکارے گئے اورانھوں نے ووٹ ڈالے۔

ایک ایک کرکے نمائندہ ایوان اپنا بیلٹ پپر وصول کیا اور بند جگہ پر اپنی رائے کا اظہار کیااور پھر بیلٹ پپر باکس میں ڈال دے دیا۔

ووٹنگ کا عمل مکمل ہونے کے بعد پھر دو منٹ کیلئے گھنٹیاں بجائی گئیں تاکہ اراکین لابی سے پہنچ کر ایوان میں نتائج سن سکیں ۔

شاہدخاقان عباسی آج شام صدر مملکت سے وزارت اعظمی کا حلف لیں گے۔ سماء

PML N

prime minister of pakistan

SHAIKH RASHEED

PM Disqualification

PM Election

Tabool ads will show in this div