خاتون ڈاکٹر پر حملے میں کالعدم لشکر جھنگوی ملوث نکلی

ویب ایڈیٹر :


کراچی   :   سینٹرل جیل کراچی میں قید کالعدم لشکر جھنگوی کے دہشت گرد نے امریکی خاتون ڈاکٹر پر حملے سے متعلق سنسنی خیز انکشافات کردیئے۔

کراچی کے علاقے فیروز آباد میں دہشت گردوں کی فائرنگ سے زخمی ہونے والی امریکی خاتون کے کیس کی تحقیقات میں پولیس کو اہم شواہد ملے گئے، تفتیشی ذرائع کے مطابق امریکی خاتون ڈاکٹر ڈیبرا لوبو پر حملہ کرنے والے دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیم لشکر جھنگوی سے ہے۔ ملزمان پولیس پر حملوں سمیت دہشت گردی کی متعدد سنگین ورادتوں میں ملوث ہیں۔

پولیس کے مطابق ملزمان کی شناخت سی ٹی وی فوٹیج اور ملنے والے دیگر شواہد کی مدد سے ہوئی ہے۔ خیال رہے کہ امریکی خاتوں ڈاکٹر ڈیبرا لوبو کو کراچی کے علاقے فیروز آباد میں دہشت گردوں نے چند روز قبل فائرنگ کرکے زخمی کر دیا تھا۔ ذرائع کے مطابق پولیس کی خصوصی تفتیشی ٹیم نے شواہد کی روشنی میں سینٹرل جیل میں قید کورنگی سے پولیس اہلکاروں کے قتل کیس میں گرفتار ہونے والے ملزم ندیم اقبال اور دیگر قیدیوں سے کیس کے حوالے سے تفتیش کی ہے۔

پولیس کا دعویٰ ہے کہ جلد ملزمان کو گرفتار کر لیا جائے گا۔ تفتیشی ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزمان کا گروہ شہر میں دہشت گردی کی کئی وارداتوں میں بھی ملوث ہے اور واردات کے بعد کچھ عرصے کے لئے روپوشی اختیار کر لیتا ہے۔ تفتیشی ٹیم کے مطابق وردات میں استعمال ہونے والا اسلحہ دہشت گردی کی چار مختلف ورادتوں میں استعمال ہوا ہے۔ سماء

میں

پر

KESC

policy

oslo

Tabool ads will show in this div