متحدہ سیاسی جماعت نہیں، دہشتگرد تنظیم ہے، پابندی لگائی جائے، راؤ انورکا مطالبہ

ویب ایڈیٹر

کراچی : راؤ انوار کا کہنا ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ اور الطاف حسین سمیت دیگر رہنماء بھارت کیساتھ مل کر پاکستان کیخلاف دہشت گرد کارروائیوں میں ملوث ہیں، ٹی ٹی پی کی طرح ایم کیو ایم پر بھی پابندی لگائی جائے، متحدہ  اور ان کی قیادت پر الزامات ثابت کرنے کیلئے ٹھوس ثبوت اور گرفتار ملزمان کے اعترافی بیانات موجود ہیں۔

کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایس ایس پی ملیر راؤ انوار نے متحدہ قومی موومنٹ اور ان کی قیادت سے متعلق سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ گزشتہ رات احسن آباد سے 2 اہم دہشت گرد طاہر لمبا اور جنید کو گرفتار کیا گیا، جن کا تعلق ایم کیو ایم سے اور دونوں سرکاری ملازم ہیں، تفتیش میں ملزمان نے بھارت جاکر تربیت حاصل کرنے کا اعتراف کیا، جس کیلئے لندن میں متحدہ رہنماء ندیم نصرت، ذوالفقار حیدر اور محمد انور نے ’’را‘‘ سے رابطہ کرایا۔

وہ کہتے ہیں کہ ملزمان سے تفتیش کے دوران پتہ چلا ہے کہ جاوید لنگڑا کو ہندوستان کی شہریت بھی مل چکی ہے، متحدہ کے ہر سیکٹر سے کارکن بھارت جاتے ہیں، اس نیٹ ورک میں 60 سے 70 لڑکوں کی اطلاع ہے، لڑکے پہلے دہلی اور پھر وہاں سے را کے لوگ کے ساتھ دیرادھون جاکر دہشت گردی کی تربیت لیتے ہیں۔

راؤ انوار نے مزید کہا کہ الطاف حسین، محمد انور، ندیم نصرت اور ذوالفقار حیدر را کے ساتھ مل کر پاکستان میں دہشت گرد کارروائیوں میں ملوث ہیں، بھارت سے ایسا تعلق کسی بھی سیاسی جماعت کا نہیں، متحدہ خود کراچی کے حالات خراب کرنے میں ملوث ہے، یہ ڈاکٹرز، وکلاء، اساتذہ اور پروفیسرز کو قتل کرتے ہیں۔

ایس ایس پی ملیر کا کہنا ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ سیاسی نہیں دہشت گرد جماعت ہے، متحدہ طالبان سے بھی زیادہ خطرناک ہے، اس پر بھی پابندی لگائی جائے، ملزمان کا ریمانڈ لیا ہے تفتیش کررہے ہیں، مزید سنسنی خیز انکشافات بھی سامنے آئیں گے، گورنر سندھ کا نام کسی معاملے میں نہیں آیا، مجرمانہ کارروائیوں میں جو بھی ملوث ہوگا اس کو گرفتار کرکے قانون کے کٹہرے میں لائیں گے۔

صحافی کے سوال پر کہ اگر متحدہ اس معاملے پر ہڑتال کا اعلان کردے تو کیا کریں گے پر راؤ انوار نے کہا کہ میں دیکھتا ہوں کراچی میں کیسے ہڑتال ہوتی ہے، کراچی آپریشن کا واحد پولیس افسر ہوں جو زندہ ہے، کافی عرصے سے ایم کیو ایم کی ہٹ لسٹ پر ہوں۔

راؤ انوار نے مزید کہا کہ بھارت اور دیگر ممالک جانے والے ایم کیو ایم کے کارکنان اور رہنماؤں کے اخراجات خدمت خلق فاؤنڈیشن سے جاری ہوتے ہیں، جس کے ٹھوس اور تحریری ثبوت بھی موجود ہیں۔ سماء

rizvi

century

Malaysia

policy

galaxy

Tabool ads will show in this div