ظفرحجازی سےمتعلق میڈیکل بورڈکافیصلہ

Jul 22, 2017
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/07/Zafar-Hjazi-Pims-Hospital-Isb-22-07-1.mp4"][/video]

zafar-hijazi-640x348

اسلام آباد: ایس ای سی پی کے چیئرمین ظفرحجازی سےمتعلق پمزکےڈاکٹرزنےمیڈیابریفنگ میں دعوی کیاکہ وہ کئي بيماريوں ميں مبتلا ہيں، ان سے تفتيش کي اجازت نہيں دے سکتے۔

چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی سے متعلق میڈیکل بورڈ کا اجلاس ہوا۔پانچ رکنی بورڈ پمز اسپتال کے پانچ سنیئر ڈاکٹرز شامل ہیں۔ امراض قلب، یورالوجی، شعبہ مثانہ و گردہ، میڈیسن کے ماہرین بورڈ کا حصہ ہیں۔

میڈیکل بورڈنےظفر حجازی کو24 گھنٹےمزیداسپتال میں رکھنےکافیصلہ کیا۔ظفر حجازی کی بیشتر میڈیکل رپورٹس تیار کرلی گئیں۔ذرائع پمزاسپتال نےبتایاکہ ظفرحجازی کےای ٹی ٹی،ایکسرے، الٹراساؤنڈ،ایچ بی اے ون سی، بلڈ اور دیگر ٹیسٹ کئے گئے۔

بورڈ اجلاس میں میڈیکل ٹیسٹوں کا تفصیلی جائزہ لیاگیا۔ڈاکٹرفیصل کاکڑکاکہناتھاکہ ظفر حجازی کو سینے ميں درد اور سانس کا مسئلہ تھا۔انھیں

دل کا عارضہ ہے،کارڈیالوجی سینٹر داخل کردیا گیا ہے۔

ڈاکٹر فیصل نےبتایاکہ ان کے یورین ٹیسٹ میں انفیکشن پایا گیا،گردوں کےکچھ ٹیسٹ  ہوں گے۔

ڈاکٹروں نے رائے دی کہ ظفرحجازی کی حالت ٹھیک نہیں،ابھی تفتیش کی اجازت نہیں دیں گے اورظفر حجازی کی انجیوگرافی بھی کرناہوگی۔ ڈاکٹر فیصل اور ڈاکٹر نسرین نے دباؤ کا تاثر مسترد کر دیا۔ سماء

panama case

Zafar hijazi

Tabool ads will show in this div