وزیراعلیٰ سندھ کے استعفےکے حق میں نہیں، چوہدری نثار

Nov 30, -0001

ویب ایڈیٹر:


راولپنڈی:وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان کا کہنا ہے کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی یہ جنگ آخری دہشتگرد کےخاتمے پرختم ہوگی۔



کلر سیداں میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیرداخلہ نے کراچی میں سانحہ صفورا گوٹھ سانحے کے بعد وزیراعلیٰ سندھ سے استعفے کے مطالبے پرکہا کہ وزیراعلیٰ سندھ سے استعفے کے مطالبے کے حق میں نہیں ہوں۔ ہشتگردی پر استعفیٰ مانگنا آسان ترین کام ہے ،دنیا بھرمیں کہیں بھی دہشتگردی پر وزیراعلیٰ سے استعفیٰ نہیں مانگا جاتا۔ انہوں نے کہاکہ  نیویارک میں دہشتگردی ہوئی لیکن سیون سیون واقعے پرکسی نے استعفیٰ نہیں مانگا۔



امن و امان کی مخدوش صورتحال پر وفاقی وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ ملکی حالات ٹھیک کرنے کیلئے دن رات کام کرنے کی ضرورت ہے، 10 ہزار سے زائد انٹیلی جنس آپریشن کر کے دہشتگردوں پرزمین تنگ کر دی ہے۔ دہشتگردی سے خوف زدہ ہونے کے بجائے اللہ کی مدد سے یہ جنگ جیتیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کوئی یہ کیوں نہیں سوچتا کہ دھماکےکم ہوگئے ہیں ہفتے گزرجاتےہیں اب کوئی دھماکا نہیں ہوتا۔
 
کپتان اور تحریک انصاف کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے وفاقی وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ انقلاب کے دعویدار قوم کو متحد کرنے کی نہیں تقسیم کرنے کی سوچ لارہے ہیں۔ انقلاب والوں نے دھرنوں اور غلط بیانی کے سوا کچھ نہیں دیا۔ ان کے ساتھ ق لیگ اور پیپلز پارٹی کے سیاسی بھگوڑے شامل ہیں۔  چوہدری نثار نے کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کو انقلاب لانا ہوتا تو خیبر پختونخوا میں لا چکی ہوتی۔ انقلاب لانے والوں نے دھرنے دینے کو سیاست بنا لیا ہے اور اگر کسی کیس میں خلاف فیصلہ آ جائے تو جج کے خلاف ہی بولنا شروع کر دیتے ہیں۔

چوہدری نثار نے ق لیگ اور پیپلز پارٹی کو بھی نہ بخشا، کہنے لگے کہ ق لیگ سیاسی جماعت ہی نہیں، یہ پرویز مشرف کے ساتھ ختم ہو رہی ہے اور پیپلز پارٹی کا وجود بھی ختم ہو رہا ہے۔ سماء


سندھ

D-Chowk

aid

umerkot

Tabool ads will show in this div