سندھ میں نہ گورنر راج کا خوف ہے نہ جادو کی چھڑی کا،زرداری

ویب ایڈیٹر  : 

اسلام آباد  :   سابق صدر   اور   پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ سندھ کو تبدیل نہیں کیا جا رہا، سندھ میں گورنر راج لگنے کا بھی کوئی خوف نہیں، جب کہ اٹھارویں ترمیم کے بعد گورنر راج لگانا آسان نہیں، گفتگو کے درمیان سابق صدر بار بار فوج کی جانب بھی اشارہ کرتے رہے۔

بلاؤل ہاؤس اسلام آباد میں میڈیا سے گفت گو میں سابق صدر آصف علی زرداری کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ سندھ کو تبدیل نہیں کیا جا رہا اور نہ ہی سندھ میں گورنر راج لگنے کا کوئی خوف ہے، زرداری کا کہنا تھا کہ اٹھارہویں ترمیم کے بعد گورنر راج لگانا آسان نہیں، گورنر راج لگوانے والوں کی سوچ قیاس آرائیاں اور اخباری خبریں ہیں۔

صحافیوں سے غیر رسمی گفت گو میں آٓصف علی زرداری نے کہا پیپلز پارٹی آج بھی ملک کی سب سے بڑی جماعت ہے، اگر امپائر نیوٹرل ہو جائے تو پی پی آج بھی وہیں کھڑی ہے جہاں پہلے تھی، سابق صدر بار بار میڈیا سے گفت گو میں آرمی کی جانب اشارہ کرتے رہے اور حالیہ بیانات پر ردعمل دیتے ہوئے کہنے لگے کہ مجھے جادو کی چھڑی سے کوئی خوف نہیں، پیپلزپارٹی سے جتنے بڑے نام الگ ہوئے سیاست میں ان کا کوئی نام نہیں رہا، اکا دکا افراد 'امپائر' کے اشارے سے ہی الیکشن جیتتے ہیں،  بلاول بھٹو سے متعلق پوچھے گئے سوال کے جواب میں زرداری کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری پاکستان آنے کے لئے دبئی پہنچ چکے ہیں۔

سابق صدر کا کہنا تھا چین پندرہ سو میل لمبی سڑک بنانا چاہتا ہے تو ہمیں کوئی اعتراض نہیں ڈر ہے ہم یہ موقع نہ کھو دیں، ہم نے پاک چین اقتصادی راہداری ایک ہزار میل منظور کروایا تھا، اب اگر حکومت1500میل بنانا چاہتی ہے تو ہمیں اعتراض نہیں، سیاسی جماعتوں کو نئی پیش رفت پر راضی کرنے کو تیار ہوں۔

ذوالفقار مرزا کی جانب لگائے گئے الزامات پر زرداری نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ذوالفقارمرزا جو کہہ رہے ہیں اس پر میں کیا کہہ سکتا ہوں، ذوالفقار مرزا جو کہہ رہے ہیں اس پرمیں کیا کہہ سکتا ہوں، اب ایسی باتیں کرتے ہیں جو سمجھ سے بالاتر ہیں، ہم سمجھتے ہیں کہ ذوالقفار مرزا کی زبان گندی ہے۔ سماء

میں

کی

کا

سندھ

offers

protect

christians

Tabool ads will show in this div