کارگل جنگ،ہلاک بھارتی فوجیوں کیلئےمختص فلیٹس پرفوج کاقبضہ

_65167393_tyqtsb2q

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/07/Adarsh-scam-Adarsh-probe-indicts-ex-Army-chiefs-top-officer.mp4"][/video]

نئی دہلی : بھارتی ہائی کورٹ نے آدرش ہاؤسنگ اسکینڈل میں دو سابق بھارتی آرمی چیفس، بحریہ کے سابق سربراہ، تین لیفٹیننٹ جنرلز اور چار میجر جنرلز سمیت اعلیٰ فوجی افسران کو مقدمے میں نامزد کردیا۔ ممبئی کے عین بیچوں بیچ پوش علاقے میں قائم 31 منزلہ عمارت جس کو صرف کارگل جنگ میں ہلاک ہونے والے بھارتی فوجیوں کے اہل خانہ کیلئے مخصت کیا گیا تھا، حاضر سروس بھارتی فوجیوں، سیاست دانوں اور بیورو کریٹس نے اس پر قبضہ کرلیا۔ قبضے کے خلاف ہلاک فوجیوں کے اہل خانہ ممبئی ہائی کورٹ سے رجوع کیا،جس پر عدالت نے مارے گئے فوجیوں کے اہل خانہ کے حق میں فیصلہ دے دیا۔

Drass :  Kargil war martyrs' families visiting their memorials during a function to commemorate the 16th anniversary of the war at Drass on Saturday. PTI Photo by S Irfan  (PTI7_25_2015_000035B)

بھارتی ذرائع ابلاغ میں جاری ہونے والی اطلاعات کے مطابق کارگل جنگ میں مارنے جانے والے بھارتی جوانوں کی بیواؤں کیلئے مختص پلاٹ پر ممبئی ہائی کورٹ کے حکم پر قائم انکوائری کمیٹی نے آدرش ہاؤسنگ اسکینڈل میں دو سابق بھارتی آرمی چیفس کے علاوہ بحریہ کے سابق سربراہ ،3لیفٹیننٹ جنرلز اور 4میجر جنرلز سمیت اعلیٰ فوجی افسران کو نامزد کردیا۔ 359238-kargil-memorial-drass-pti ممبئی ہائی کورٹ کے حکم پر یہ انکوائری کمیٹی سابق وزیر دفاع منوہر پاریکر نے قائم کی تھی۔ ممبئی میں کارگل جنگ میں مارے گئے فوجیوں کے لواحقین کی رہائشی عمارت 31منزلہ عمارت آدرش سوسائٹی میں مبینہ اسکینڈل سامنے آیا تھا۔ adarsh اسکینڈل میں غیر قانونی طور پر سابق آرمی چیف، نیوی چیف، سیاستدانوں اور بیوروکریٹس کے نام بھی فلیٹس الاٹ کر دیئے گئے تھے،جس کے بعد انکوائری کا آغاز کیا گیا تھا۔

110-feet-jump_L2 انکوائری کمیٹی نے اپنی رپورٹ میں آرمی کے دو سابق سربراہوں، این سی وج اور دیپک کپور کے علاوہ بحریہ کے سابق ایڈمرل مادھویندر سنگھ کے ناموں کی تصدیق کی ہے، اس سے قبل مہاراشٹر کے چار سابق وزرائے اعلیٰ، دو ریاستی وزیروں اور 12کے قریب بیورو کریٹس پر پہلے ہی فرد جرم عائد کی جاچکی ہے۔ tv

tv india tv in انکوائری کمیٹی کے مطابق اس سارے معاملے میں سابق آرمی چیف این سی وج نے خاموشی اختیار کیے رکھی اور کوئی اعتراض نہیں کیا، جب کہ دیپک کپور نے اس حوالے سے غلط معلومات فراہم کیں۔ سماء

indian

Kargil war

Indian military

indian slain soldiers

adarsh Scam

Mumbai High Court

Adarsh Housing Society

Former Army Cheif

Tabool ads will show in this div