سانحہ صفورا میں ملوث 4 ملزمان عدالت میں پیش، 14 روزہ ریمانڈ منظور

اسٹاف رپورٹ

کراچی : سانحہ صفورا کے 4 ملزمان کو 14 روز کے جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا، عدالت نے حکم دیا کہ ملزمان کو 5 جون کو عدالت میں پیش کیا جائے۔

صفورا میں اسماعیلی برادری کو بدترین دہشت گردی میں ملوث ملزمان کو سخت سیکیورٹی حصار میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

ملزم اظہر عشرت، طاہر حسین، سعد عزیز اور حافظ ناصر کو بکتر بند گاڑی میں عدالت میں لایا گیا، ملزمان کی پیشی کے وقت پولیس کے خصوصی دستے نے عدالت کو اپنے حصار میں لئے رکھا، ملزمان کے چہرے کپڑوں سے ڈھانپ دیئے گئے تھے۔

عدالت کے استفسار پر حافظ ناصر نے بتایا کہ وہ احسن آباد میں رہتا ہے اور کراچی کا رہائشی ہے، ملزم سعدعزیز کا کہنا تھا کہ گلشن اقبال کا رہائشی ہے جبکہ طاہر حسین نے بتایا کہ اس کا تعلق جہلم سے ہے اور گلشن معمار میں رہائش پذیر ہے۔

پولیس نے عدالت کو بتایا گیا کہ ملزمان کیخلاف پولیس مقابلہ، دھماکا خیز مواد اور غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے نو مقدمات درج ہیں، پولیس نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزمان سے اہم انکشافات متوقع ہیں، تفتیش کیلئے مہلت دی جائے، ملزمان کا 30 روزہ ریمانڈ منظور کیا جائے۔

عدالت نے 4 ملزمان کا 14 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے پولیس کے حوالے کردیا، عدالت نے حکم دیا کہ ملزمان کو 5 جون کو عدالت میں پیش کیا جائے۔ سماء

ملزمان

policy

myanmar

Tabool ads will show in this div