وزیراعظم کے خلاف نا اہلی کی درخواست 24 سال بعد مسترد

ویب ایڈیٹر:

لاہور:وزیراعظم نواز شریف کے خلاف بیرون ملک اثاثے بنانے کے الزام میں دائر درخواست 24 سال بعدناقابل سماعت قرار دے دی گئی۔

درخواست 1991 میں نواز شریف کے وزیراعظم بننے کے بعد بیرسٹر جاوید اقبال جعفری نے لاہورہائیکورٹ میں دائرکی تھی۔ درخواست میں الزام عائد کیا گیا تھا کہ نواز شریف نے منی لانڈرنگ کے ذریعے بیرون ملک اثاثے بنائے اس لیے انہیں نااہل قرار دیا جائے۔

درخواست پروقتاً فوقتاً فل بینچ تشکیل دیے جاتے رہے جبکہ کئی بارججوں کی ریٹائرمنٹ یا سپریم کورٹ جانے پربینچ ٹوٹتے رہے۔

جسٹس فرخ عرفان کی سربراہی میں لاہور ہائیکورٹ کا  5 رکنی بینچ دوران سماعت درخواستگزار کو بارباراپنے دلائل قانونی نکات تک محدود کرنے کی ہدایت کرتا رہا۔ بیرسٹر جاوید اقبال جعفری کو درخواست کے قابل سماعت ہونے پر بھی دلائل دینے کا کہا جاتا رہا۔

لاہورہائیکورٹ نے دو سماعتوں میں دلائل سننے کے بعد بالاخر درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر خارج کردی۔ سماء

eid

خلاف

درخواست

NA-122

Tabool ads will show in this div