قائداعظم ریذیڈنسی پر حملے کا ملزم ہزار گنجی سے گرفتار

ویب ایڈیٹر:


کوئٹہ   :   کوئٹہ پولیس نے قائداعظم ریذیڈنسی پرحملے کا دہشت گرد  ہزار گنجی سےگرفتار کرلیا گیا۔ ایس ایس پی آپریشنز کے مطابق گرفتار  دہشت گرد  کےخلاف زیارت تھانےمیں مقدمہ درج ہے۔ واضح رہے کہ زیارت ریذیڈنسی حملے میں ملوث 11 میں سے9  دہشت گرد پہلے ہی گرفتار کیے جا چکے ہیں۔

کوئٹہ میں پریس کانفرنس کے دوران سینیر سپرٹینڈنٹ پولیس آپریشنز اعتزاز احمد گورایہ کا کہنا تھا کہ کوئٹہ کے علاقے ہزار گنجی میں کامیاب آپریشن کے دوران زیارت کی قائداعظم ریذیڈنسی پر حملے میں ملوث مرکزی  دہشت گرد  پکار عرف پکو کو حراست میں لے لیا گیا۔
 
ایس ایس پی آپریشنز  کے مطابق ملزم ضلع شاہرگ ہرنائی کا رہنے والا تھا جو  قائداعظم ریذیڈنسی پر حملے کے مقدمے میں نامزد تھا، اب تک قائداعظم ریذیڈنسی پر حملے میں ملوث دس دہشت گرد کو گرفتار کیا جاچکا ہے۔ اعتزاز احمد گورایہ کا مزید کہنا تھا کہ پولیس نے مرکزی دہشت گرد کی گرفتاری کیلئے کارروائی خفیہ معلومات ملنے پر کی، دہشت گردکا تعلق کالعدم دہشت گرد تنظیم سے ہے۔ اعتزاز احمد گورایہ کے مطابق دہشت گرد کو تفتیش کیلئے اعلیٰ حکام کے حوالے کیا جاسکتا ہے۔

واضح رہے کہ سال دو ہزار تیراہ میں پندرہ جون کو مسلح دہشتگردوں بلوچستان کے علاقے زیارت میں قائداعظم ریذیڈنسی پر حملہ کرکے قائداعظم کی آخری آرام گاہ کو تباہ کردیا تھا، جس کے بعد حکومت اور فوج کے تعاون سے زیارت ریزیڈنسی کی دوبارہ تعمیر نو کا اعلان کیا، اور گزشتہ سال دو ہزار چودہ میں 14 اگست کے موقع پر اس کی تعمیر نو مکمل ہونے پر اس کا افتتاح کیا گیا۔ سماء

کا

پر

سے

Azadi March

sahir lodhi

KESC

nepra

Tabool ads will show in this div