جے آئی ٹی میں شریف خاندان کی کاروباری دستاویز میں تبدیلی کی تحقیقات

Chairman SECP In Jit Isb Pkg 30-06

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/06/Chairman-SECP-In-Jit-Isb-Pkg-30-06.mp4"][/video]

اسلام آباد : شریف فیملی کے کاروبار سے متعلق دستاویزات میں رد و بدل کا معاملہ، ایس ای سی پی کے سربراہ ظفر حجازی جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوگئے، شریف خاندان کے ٹیکس گوشواروں کا بھی تفصیلی جائزہ لیا جارہا ہے۔

جے آئی ٹی کا 52 واں اجلاس، سیکیورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن کے چیئرمین ظفر حجازی کی تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیشی ہوئی، چوہدری شوگر مل، رمضان شوگر مل اور شریف فیملی کے کاروبار سے متعلق دیگر دستاویزات میں رد و بدل کے حوالے سے سخت سوالات کا سامنا کرنا پڑا، ظفر حجازی نے جے آئی ٹی کو بیان ریکارڈ کروا دیا۔

حکمران خاندان کی آف شور کمپنی اور کاروبار سے متعلق تمام ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دیا گیا، تحقیقاتی ٹیم نے شریف فیملی کی جانب سے پیش کردہ ٹیکس گوشواروں اور بینکوں سے لئے گئے قرضوں کے حوالے سے دستاویزات کا بھی جائزہ لیا۔

ایس ای سی پی کی جانب سے پیش کردہ دستاویزات کی روشنی میں وزیراعظم کے چچا زاد بھائی طارق شفیع کیلئے مزید سوالات تیار کرلئے گئے، انہیں جے آئی ٹی نے 2 جولائی کو دوبارہ طلب کر رکھا ہے۔ سماء

JIT

SHARIF FAMILY

Panama

SECP Chairman

Tabool ads will show in this div