مسئلہ فلسطین کا حل اسرائیل قبضے کے خاتمہ سے ہی ممکن ہے

91042c846722459392368a14b0ca087f_18

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل آنتونیو گوٹرس نے کہا ہے کہ اسرائیل اور فلسطین کے مسئلے کا واحد حل فلسطین پر اسرائیل کے 50 سالہ قبضہ کے قبضے کے خاتمہ سے ہی ممکن ہوسکتا ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل گوٹرس نے فلسطین پر اسرائیل کے قبضے کی 50 ویں برسی کی مناسبت سے اقوام متحدہ میں منعقدہ ایک فورم کو جاری پیغام میں کہا کہ عرب اسرائیل جنگ کے بعد اسرائیل کی جانب سے دریائے اردن کے مغربی کنارے، مشرقی القدس اور گولان کی پہاڑیوں پر قبضہ جمانے کے باعث لاکھوں فلسطینی اور شامی شہریوں کو اپنا گھر بار چھوڑنا پڑا اور اس قبضے سے فلسطینی عوام کو بھاری نقصانات پہنچے جبکہ نئی فلسطینی نسلیں مہاجر کیمپوں میں مفلسی اور مستقبل کی توقعات سے عاری ماحول میں پرورش پا رہی ہیں۔

گوٹرس نے کہا ہے کہ اس شدت اور انتقام کے ماحول میں نہ تو فلسطینی اپنی مملکت کو قائم کر سکتے ہیں اور نہ ہی اسرائیل امن و سلامتی کے ماحول کا مالک بن سکتا ہے لہذا اسرائیل کو مقبوضہ علاقوں سے انخلاء کرنا ہوگا تا کہ شدت کا خاتمہ ہو سکے۔ اے پی پی

baitul muqaddas

Arab-Israel war

Tabool ads will show in this div