فائرنگ اور پرتشدد واقعات میں 10 سے زائد افراد زخمی

اسٹاف رپورٹ

پشاور : خيبرپختونخوا ميں بلدياتی انتخابات کے دوران قانون کی دھجياں اڑادی گئيں، پشاور کے مختلف علاقوں ميں فائرنگ اور پرتشدد واقعات ميں 10 سے زائد افراد زخمی ہوگئے، ڈی آئی خان، نوشہرہ، ایبٹ آباد اور سوات ميں فوج کو طلب کرلیا گیا۔

خيبرپختونخوا ميں بلدياتی انتخابات کے دوران قانون کے رکھوالے امن برقرار رکھنے ميں ناکام رہے، پشاور کے فقير آباد پوليس اسٹيشن کے باہر دو گروپوں ميں تصادم ہوا، مسلح شخص گاڑی سے فائرنگ کرکے خوف و ہراس پھيلاتا رہا، فائرنگ اور پرتشدد واقعات ميں زخمی ہونے والوں کو ليڈی ريڈنگ اسپتال منتقل کيا گيا۔

ڈی آئی خان ميں لچھرا پولنگ اسٹیشن میدان جنگ بنا رہا، ن ليگ اور پی ٹی آئی کارکنوں کے درميان تصادم کے بعد فوج طلب کی گئی۔

نوشہرہ ميں جماعت اسلامی اور پی ٹی آئی کے کارکن گتھم گتھا ہوگئے جس کے باعث فوج کو آنا پڑا۔ ہری پور ميں درہم پانی پولنگ اسٹيشن نمبر 78 ميں فائرنگ سے پی ٹی آئی کے 3 کارکن زخمی ہوگئے۔

ایبٹ آباد ميں اسکول ميں حالات کشيدہ ہونے پر فوج کی مدد لی گئی، پولیس نے سماء کے رپورٹر کو دھکے ديئے۔ سوات کے اسکول ميں بھی کشیدہ حالات کے سبب فوج کو ميدان ميں اترنا پڑا۔

چارسدہ کے گورنمنٹ گرلز اسکول خاص میں اے این پی کے کارکن خواتین پولنگ اسٹیشن میں گھس گئے اور توڑ پھوڑ شروع کردی۔ سماء

زخمی

MQM

فائرنگ

Travel

Tabool ads will show in this div