عامر خان اور پانچ کارکنوں کیخلاف دہشتگردی کا مقدمہ درج

کراچی: ایم کیوایم کے رہنما عامرخان کیخلاف اور ان کے چھ ساتھیوں کے خلاف جرائم پیشہ عناصر کو پناہ دینے کےالزام میں مقدمہ درج کرلیا گیا ۔ انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ رینجرز کی مدعیت میں درج کیاگیا۔ 


ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کے رکن عامر خان کو نائن زیرو سے گیارہ مارچ کو گرفتار کیا گیا تھا ۔

تیرہ مارچ کو انھیں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا گیااور نوے روز کا ریمانڈ حاصل کیاگیا۔

گزشتہ شب ان پر عزیز آباد تھانے میں رینجرز کی مدعیت میں عزیز آباد تھانے میں مقدمہ درج کرلیاگیا۔ مقدمے کی کاپی سماء نے حاصل کرلی ۔

 

ایف آئی آر میں عامرخان اور ان کے پانچ دیگر ساتھیوں قاضی اسد، رئیس عرف ماما  ، شہزاد ملا، عمران اعجاز اور نعیم عرف ملاکو بھی نامز کیا گیا۔

ایف آئی آر کے متن کے مطابق عامر خان نے فرحان مُلا، عبید کے ٹو، نادر شاہ اور دیگر جرائم پیشہ عناصر کو پناہ دی تھی جوقتل سمیت دیگر سنگین وارداتوں میں ملوث ہیں۔

مقدمےمیں انسداد دہشتگردی کی دفعات بھی شامل ہیں ۔ سماء

burger

Tabool ads will show in this div