پہلے مسلمانوں کو قتل کی دھمکی، پھر کہا مذاق ہے،ویڈیو وائرل

iord لندن : سوشل میڈیا پر وائرل ہوتی برطانوی شخص کی ویڈیو نے نیا تنازعہ کھڑا کر دیا، پہلے ویڈیو میسج میں کہا کہ اسے مسلمانوں سے نفرت ہے، پھر کچھ دیر بعد جانے کیا سوچ کر تردید کی ویڈیو پوسٹ کر ڈالی اور کہا کہ وہ ویڈیو ازرہ مذاق پوسٹ کی تھی۔ سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر جاری نئی ویڈیو نے برطانیہ میں مقیم مسلمانوں میں تشویش کی لہر دوڑا دی، جس میں ایک نامعلوم برطانوی شخص نے مسلمانوں کے خلاف نفرت کا اظہار کرتے ہوئے مار ڈالنے کی دھمکی دے ڈالی۔ اپنی ویڈیو میں برطانوی شخص کا کہنا تھا کہ وہ مسلمانوں کو تلوار اور گرینڈ سے مارنا چاہتا ہے۔ اپنی ویڈیو میں اس شخص کا کہنا تھا کہ تم مسلمان اپنے آپ کو مسلمان کہتے ہوں، مگر میں تم کو ڈرپوک کہنا ہوں، تم لوگ بارود اور بمبوں سے معصوم لوگوں اور بچوں کو اڑاتے ہوئے اور تمہیں ڈر نہیں لگتا، تاہم اب تم لوگوں کو ڈرنا چاہیئے کیوں کہ میں تم لوگوں کے ساتھ بھی یہ کچھ کروں گا۔ اپنے ہاتھ موجود تلوار کو ہوا میں لہراتے ہوئے برطانوی شخص کا کہنا تھا کہ میں تم لوگوں کی عبادت گاہوں میں گھس کر تمہارے کان، ناک اور انگلیاں کاٹ دونگا اور تمہارا خون بہاؤں گا، جب تک تم ڈر نہ محسوس کروں۔ تاہم کچھ دیر بعد ہی اس نے اپنی پوسٹ اور بیانات کو واپس لیتے ہوئے معذرت کی اور کہا کہ یہ سب کچھ میں نے مذاق میں کہا تھا، اس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں، میرے اپنے کئی دوست مسلمان ہیں۔ وہ ویڈیو ایک مذاق تھا، جسے کسی کو سوشل میڈیا پر پوسٹ نہیں کرنا چاہئے تھا۔ سماء

INTERESTING

sword

London Attack

UK man

grenade

threats to Muslims

Tabool ads will show in this div