تعصب کا مظاہرہ ہوا تو معاملہ عوام کے سامنے آئے گا

Jun 01, 2017

Jit Hussain Nawaz Talk Isb 01-06

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/06/Jit-Hussain-Nawaz-Talk-Isb-01-06.mp4"][/video]

اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف کے صاحبزادے حسین نواز نے جے آئی ٹی کو بیان ریکارڈ کرا دیا، انہوں نے کہا کہ ابھی سمن نہیں ملا، ملے گا تو آپ کو بتادیں گے۔

جوڈیشل اکیڈمی اسلام آباد میں جے آئی ٹی کے روبرو تیسری مرتبہ پیش ہونے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حسین نواز نے کہا کہ وہ صبح 10 بجے پہنچے اور شام چار بجے انہیں واپس جانے کی اجازت ملی، انہیں دوبارہ بھی پیش ہونے کا کہا گیا ہے لیکن اب تک اس کے سمن جاری نہیں ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ اگر تمام معاملات قانون کے مطابق چلائے گئے اور منصفانہ رویہ اپنایا گیا تو ٹھیک ہے لیکن اگر تعصب کا مظاہرہ کیا گیا تو پھر معاملہ سپریم کورٹ، عوام اور میڈیا کے سامنے آئے گا۔

حسین نواز نے کہا کسی کے رویے پر بات نہیں کرنا چاہتا، سارے معاملات قانون کے مطابق چلیں گے تو ٹھیک ، قانون کے مطابق نہیں ہوا تو معاملہ سپریم کورٹ جائے گا۔

وزیراعظم کے صاحبزادے نے کہا کہ ہمیں اپنے ساتھ وکیل بٹھانے کی اجازت نہیں دی گئی،حسین شہید سہروردی سے لے کر آج تک ہمارا ہی احتساب ہوتا آیا، وزیر اعظم، میرے یا بہن بھائی کے خلاف کوئی ثبوت نہیں۔

حسین نواز کا مزید کہنا تھا کہ کچھ بے ضابطگی نہیں ہوئی تو کوئی ثبوت بھی نہیں نکلے گا، لسی اور لڑائی کا بڑھاوا کبھی ختم نہیں ہوتا۔ سماء

JIT

hussain nawaz

hassan nawaz

panama case