وزیراعلی پنجاب نے تاثیر کو فوری بازیاب کرنے کا حکم دے دیا

Nov 30, -0001

رپورٹ جہانگير خان
لاھور: سابق گورنر پنجاب سلمان تاثیر کے صاحبزادے شہباز تاثیر کو لاہور میں اغوا کر لیا گیا۔ اغوا کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ وزیراعلی پنجاب نے شہباز تاثیر کو فوری بازیاب کرانے کے لئے کارروائی کا حکم دیا ہے۔
سابق گورنر پنجاب سلمان تاثیر کے بیٹے شہباز تاثیر کارمیں سوار ہو کر اپنے دفتر جارہے تھے، کہ گلبرگ میں حسین چوک کے قریب انہیں نامعلوم مسلح افراد نے روک کر اغوا کرلیا۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس اہلکار موقع پر پہنچ گئے۔
موبائل فون ریکارڈ کے ذریعے تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے اور واقعے کا مقدمہ شہباز کی خالہ کی مدعیت میں تھانہ گلبرگ میں نامعلوم افراد کے خلاف درج کر لیا گیا۔ واقعہ کے وقت شہباز تاثیر کے ساتھ کوئی سیکیورٹی اہلکار موجود نہیں تھا۔ سی سی پی او لاہور کے مطابق سابق گورنر پنجاب کے اہل خانہ کو مناسب سیکیورٹی فراہم کی گئی ہے۔
دوسري جانب شہباز تاثير کے اہل خانہ سے ملاقات کے ليے عزيز و اقارب و قريبي رشتہ داروں کي آمد کا سلسلہ جاري ہے۔ سلمان تاثير کے قريب دوست ممتاز رفيع کے مطابق ان کي کسي سے کوئي دشمني نہيں تھي واقعہ کي کڑي ممتاز قادري سے مل سکتي ہے۔
واقعہ کے بعد شہباز تاثیر کی رہائش گاہ پر بھی سیکیورٹی سخت کردی گئی۔ وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی سمیت اہم شخصیات نے سلمان تاثیر کے اہل خانہ سے رابطہ کیا اور شہباز تاثیرکی جلد بازیابی کی یقین دہانی کرائی۔
وزیراعلی شہباز شریف کراچی کا دورہ مختصر کر کے لاہور پہنچے اور ہنگامی اجلاس میں اغوا کے تمام پہلوؤں کا جائزہ لیا گیا۔ شہباز شریف نے ہدایت کی کہ ملوث مجرموں کو قانون کی گرفت میں لانے کے لئے کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے۔
وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ کا کہنا ہے تحقیقات کے لئے جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم تشکیل دے دی گئی ہے۔ سماء

کرنے

کا

کو

نے

transport

death anniversary

دیا

South

Cup

debates

Tabool ads will show in this div