پانامہ کیس جےآئی ٹی،وزیراعظم اوربچوں کےمیڈیاانٹرویوزکاریکارڈطلب

May 16, 2017

JIT 4 MEMBERS 08-05

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/05/Jit-Meeting-SC-Isb-Pkg-16-05.mp4"][/video]

اسلام آباد: پاناماکیس پرجےآئي ٹي کےساتويں اجلاس میں وزیراعظم اوران کے بچوں کےمیڈیاانٹرویوزکاساراریکارڈ طلب کرلیا گيا۔

پانامہ کیس پرجےآئی ٹی کاسوالنامہ تیارکرلیاگیاہے۔پاناما کیس پر سپریم کورٹ میں پہلی رپورٹ جمع کرانے کیلیے جے آئی ٹی کے پاس صرف چار دن کا وقت باقی رہ گياہے۔

پاناما کیس جے آئی ٹی کی ساتویں بیٹھک کی صدارت ایڈیشنل ڈائریکٹر ایف آئی اے واجد ضیاء کی نے کیا۔ ان کی سربراہی میں تحقیقات جاری ہیں۔الیکشن کمیشن سے موصول وزیراعظم اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے گوشواروں کاجائزہ لیا گیا۔

اس کےعلاوہ لندن فلیٹس سے متعلق سوالنامہ بھی تیارکرلیاگیاہے۔اجلاس نے وزیراعطم اوراُن کے بچوں کے میڈیا انٹریوز اور بیانات کا ریکارڈ طلب کرلیا۔ باتوں میں تضادات پر سوالنامے میں پوچھ ہوگی۔وزیراعظم،حسن نوازاورحسین نوازکوطلب کرنا ہے یا سوالانامہ ارسال کیا جائے،اس کافیصلہ مشاورت کے بعد ہوگا۔

ادھرپاناما کیس سپریم کورٹ کے کیس آئندہ ہفتے کے ڈیوٹی رؤسٹرمیں شامل کرلیاگیاہے۔عملدرآمدبنچ بائیس مئی کودن ایک بجےسماعت کرےگا۔جے آئی ٹی کو پندرہ روزہ پیشرفت رپورٹ بیس مئی تک جمع کرانا ہوگی۔ سماء

JIT

panama case

Tabool ads will show in this div