بحریہ ٹاؤن واقعہ؛متاثرین کی انصاف کیلئے چیف جسٹس کو درخواست

May 15, 2017

behria

اسلام آباد :بحريہ انکليو میں نجی چینل کے پروگرام کی ریکارڈنگ کے دوران اسٹيج گرنے کا مقدمہ درج کر لیا گیا۔ واقعے کے متاثرین نے انصاف کے لیے سپریم کورٹ سے رابطہ کرلیا۔ چیف جسٹس کے نام انسانی حقوق سیل میں درخواست جمع کرادی۔ بحریہ انکلیو میں  28 اپریل کو اے آروائی کے پروگرام کی ریکارڈنگ کے دوران اسٹیج گرنے سے خاتون جاں بحق جبکہ متعدد افراد زخمی ہوئے تھے۔ سترہ روز گزرنے کے بعد بالاخر پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کر لیا۔متاثرین نے تحقیقات کیلئے چیف جسٹس کے نام سپرم کورٹ کے انسانی حقوق سیل میں درخواست جمع کرا دی۔

چیف جسٹس کے نام درخواست کے متن کے مطابق پروگرام میں ساڑھے 3 ہزار کے قریب لوگ موجود تھے۔ کئی لوگ اسٹیج گر جانے سے اس کے نیچے پھنس گئے لیکن بے حس انتظامیہ نے انہیںریسکیو کرنے کی بجائے الائٹس بند کردیں۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت تحقیقات کرانے کا حکم دے کہ پروگرام کیلئے اجازت کس نے دی؟متاثرین نے سوالات اٹھائے  اٹکہ کیا حکومتی اداروں نے پروگرام سے پہلے مقررہ جگہ کا دورہ کیا؟یہ اعلان کیوں کیا کہ واقعہ زلزلے کے باعث پیش آیا؟ حادثے کے بعد لائٹس کیوں بند کی گئیں؟۔

متاثرین نے چیف جسٹس کے نام درخواست میں مزید کہا ہے کہ پولیس مقدمہ درج کرنے کے بجائے صلح کیلئے دباؤ ڈالتی رہی ،اُن پر کس کا دباؤ تھا ؟سرکاری ٹی وی چینل اور نجی میڈیا نے حقائق کیوں چھپائے؟۔

درخواست کے مطابق کئی زخمیوں کی حالت فوری طبی امداد نہ ملنے سے خراب ہوئی ،میڈیا پربات آئی تو دس دن بعد نجی ٹی وی چینل کی انتظامیہ نے رابطہ کیا۔ طاقتور کے اگے عام انسانوں کی زندگی کی کوئی حیثیت نہیں۔ ہمیںعدالت سے شفاف انکوائری اور انصاف کی امید ہے۔

تھانہ نیلور پولیس نے طلعت محمود  کی مدعیت میں واقعہ کا مقدمہ درج کر لیا ہے۔ سماء

Beharia Town Scandal

ARY

behria enclave

Tabool ads will show in this div