رینجرز اختیارات، سندھ حکومت آج رات ریکوزیشن بھیج دیگی، چوہدری نثار

ویب ایڈیٹر

اسلام آباد : چوہدری نثار علی خان نے اُمید ظاہر کی ہے کہ سندھ حکومت رات 12 بجے سے پہلے رینجرز کے اختیارات کے معاملے پر ریکوزیشن لے آئے گی، وزیراعلیٰ سندھ سے بات چیت ہوگئی۔ وزیر داخلہ کہتے ہیں یہ تاثر دیا جارہا ہے کہ رینجرز کرائے کی فورس ہے، صوبائی حکومت سمجھتی ہے کہ وفاقی فورسز کی ضرورت نہیں تو ٹھیک ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ رینجرز کے حوالے سے معاملات طے پاگئے، رینجرز اختیارات پر وزیراعلیٰ سندھ سے بات ہوئی، توقع ہے کہ رات 12 بجے سے پہلے ریکوزیشن آجائے گی، رینجرز کی کارکردگی پر شک ہے تو کراچی کے شہریوں سے پوچھا جائے، صوبائی حکومت سمجھتی ہے کہ وفاقی فورسز کی ضرورت نہیں تو ٹھیک ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ یہ تاثر دیا جارہا ہے کہ رینجرز کرائے کی فورس ہے، رینجرز نے بھتہ خوری اور ٹارگٹ کلنگ کو ختم کیا ہے،  رینجرز کسی خاص گروہ یا جماعت کیخلاف کارروائی نہیں کرتی، پچھلے ایک سال میں رینجرز کراچی میں امن لے کر آئی ہے، سیکیورٹی فورس قانون اور ضابطے کے مطابق کام کررہی ہے، رینجرز کو متنازع بنایا جارہا ہے۔

وزیر داخلہ کہتے ہیں کہ وفاقی حکومت رینجرز کو نشانہ نہیں بننے دے گی، مخصوص مقاصد کیلئے رینجرز کو نشانہ بنایا جارہا ہے، جب من پسند حکمران تھے تو آپ رینجرز کے حق میں نعرے لگاتے تھے، سندھ حکومت رینجرز کے حوالے سے نئی ریکوزیشن بھجوائے گی۔

چوہدری نثار نے کہا کہ ڈاکٹر عمران فاروق کیس کی جے آئی ٹی کو ایف آئی اے افسر ہیڈ کررہے ہیں، معظم علی سے تفتیش مکمل ہوگئی ہے، میٹرو پولیٹن پولیس کی ٹیم واپس نہیں گئی، تفتیش کررہی ہے،  عمران فاروق قتل کیس کا ٹرائل لندن میں ہونا ہے، عید سے پہلے برطانیہ کو صرف ایک ملزم تک  رسائی دیں گے، حوالگی کی کوئی بات نہیں ہوئی، تحقیقات میں برطانوی ٹیم کے ساتھ ہماری جے آئی ٹی بھی شامل ہے۔ سماء

QaimAliShah

ChohadryNisar

AltafHussain

Tabool ads will show in this div