نوازمودی ملاقات،بھارت کےاقتصادی راہداری پرتمام تحفظات مسترد

Nov 30, -0001

ویب ایڈیٹر:


اوفا : پاکستان نے بھارت کی جانب سے  پاک چین اقتصادی راہداری سے متعلق اٹھائے گئے تمام بے جا تحفظات مسترد کردیئے، جب کہ دو رہنماؤں نے مل کر ہشت گردی کے خاتمے کے عزم کا اعادہ بھی کیا۔ نواز مودی ملاقات میں دونوں ممالک کے درمیان تمام متنازع امور پر بات چیت جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔

پاکستان اور بھارت کے تعلقات میں اہم موڑ آگیا، شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں شرکت کے موقع پر روس کے شہر اوفا کے کانگریس ہال میں وزیراعظم نواز شریف اور نریندر مودی کے درمیان اہم ملاقات ہوئی، ملاقات تقریبا آدھے گھنٹے سے زائد عرصے تک جاری رہی، ملاقات میں خطے میں امن و امان کی صورت حال اور باہمی دلچسپی کے امور سمیت دیگر معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے مسئلہ کشمیر اور بھارتی مداخلت کا معاملہ بھی اٹھایا گیا۔ وزیراعظم نواز شریف کے ہمراہ مشیر خارجہ سرتاج عزیز اور معاون خصوصی طارق فاطمی بھی موجود ہیں۔

پاکستان کی طرف سے وزیراعظم کے مشیر برائے امور خارجہ و قومی سلامتی سرتاج عزیز اور وزیراعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی جب کہ ہندوستان کی طرف سے سیکریٹری خارجہ، قومی سلامتی کے مشیر اور وزارت خارجہ کے ترجمان ملاقات میں شریک ہوئے۔

ملاقات کے بعد دونوں ممالک کے سیکریٹری خارجہ کی طرف سے مشترکہ اعلامیہ جاری کیا گیا۔ اعلامیے میں کہا گیا کہ ملاقات میں دونوں ممالک کے رہنماؤں نے خطے میں ہر قسم کی دہشت گردی کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی اور دونوں ممالک کے درمیان تمام متنازع امور پر بات چیت جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا۔ دونوں رہنماؤں نے امن کی کوششوں کو آگے بڑھانے پر بھی اتفاق کیا۔

مشترکہ اعلامئے میں یہ بھی کہا گیا کہ ممبئی حملہ کیس کے مزید ثبوت فراہم کئے جانے کے بعد تحقیقات کو آگے بڑھانے پر بھی اتفاق کیا گیا جب کہ دونوں ممالک کے درمیان ماہی گیروں کی رہائی پر بھی اتفاق کیا گیا۔ سرحدی کشیدگی کو ختم کرنے کے لئے ڈی جی ایم اوز کی ملاقات پر بھی اتفاق کیا گیا جب کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے 2016 میں پاکستان آنے کی دعوت بھی قبول کی ہے۔ ذرائع کے مطابق ملاقات میں پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے پر بھارت کی جانب سے اٹھائے گئے بے جا تحفظات کو پاکستان نے مسترد کردیا۔

جب کہ دوسری جانب ملاقات سے متعلق امریکی محکمہ خارجہ نے روس میں پاک بھارت وزرائے اعظم ملاقات کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی میں کمی کے اقدامات کا خیر مقدم کرتے ہیں اور امن کے لئے اٹھائے گئے تمام اقدامات کی حمایت کریں گے۔ سماء

PM

RUSSIA

USA

CHINA

Ufa

WHITE HOUSE

AMERICA

ECONOMIC CORRIDOR

Tabool ads will show in this div