پیپلز پارٹی کے امپورٹڈ فیصلے ، مبینہ کرپشن پر وزراء کے قلمدان تبدیل

ویب ایڈیٹر:


کراچی : سندھ کابینہ میں شامل مبینہ طور پر کرپشن میں ملوث کچھ ورزاء سے وزارتیں واپس اور کچھ کے محکمے تبدیل کردیئے گئے ہیں، شرجیل میمن، گیان چند، سہیل سیال اور منظور وسان سمیت متعدد وزرا پر تبدیلی کی آری چل گئی ہے۔

سندھ میں مبینہ طور پر مختلف وزراء سے متعلق کرپشن میں ملوث ہونے کی رپورٹس سامنے آنے کے بعد بڑے پیمانے پر صوبائی کابینہ میں اکھاڑ بچھاڑ کی گئی ہے، کئی وزرا سے محکمے واپس لے لیے گئے، جب کہ کچھ کے قلمدان تبدیل کردیئے گئے ہیں۔

سابق صوبائی وزیر اطلاعات شرجیل میمن سے بلدیات کا محکمہ لے کر ناصر شاہ کو دیدیا گیا ہے، جب کہ وزیر اطلاعات کا قلمدان کی ذمہ داریاں نثار کھوڑو کو دے دی گئی ہیں، جب کہ محکمہ تعلیم کا قلمدان نثار کھوڑو سے لے کر میر ہزار خان بجارانی کے حوالے کردیا گیا ہے، جب کہ میر ہزار خان بجارانی سے ورکس اینڈ سروسز کا محکمہ واپس لے کر شرجیل میمن کو ورکس اینڈ سروسز کا محکمہ دیا گیا ہے،آرکائیو کا اضافی چارج بھی شرجیل میمن کو دیا گیا ہے۔

مکیش کمار چاولہ کو پبلک اینڈ ہیلتھ انجینیرنگ اور دیہی ترقی کا قلمدان دیا گیا ہے، محمد وسیم کو ایڈمنسٹریٹر کے ایم سی کا اضافی چارج دے دیا گیا، اعجاز میمن کو ورکس اینڈ سروسز کا سیکریٹری مقرر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل سائیں سرکار نے کرپٹ بیورکریسی میں اکھاڑ پچھاڑ کرتے  ہوئے چھ بڑے افسران پر چھری چلاتے ہوئے نو اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو برطرف کردیا تھا ۔ سماء

PTI

CHIEF

Tabool ads will show in this div