ملک کی اہم ہاؤسنگ اسکیم جعلی ہے،عوام خبردارہوجائیں

construction

اسلام آباد: پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے ٹھلیاں ہاؤسنگ اسکیم کے اکاوںٹس بند کرنے کی سفارش کر دی ۔پی اے سی نے تحقیقات کیلئے اعظم سواتی کی سربراہی میں چار رکنی کمیٹی تشکیل دیدی ۔

خورشید شاہ کی زیر صدارت ہونے والے پی اے سی کے اجلاس میں سنیٹر اعظم خان سواتی نے ٹھلیاں ہاؤ سنگ اسکیم میں مبینہ بے قاعدگیوں کا معاملہ اٹھایا ۔اعظم سواتی کا کہ وزارت ہاوسنگ کے پاس ایک انچ زمین نہیں ہے۔ عوام سے ٹھلیاں ہاؤسنگ اسکیم کیلئے اربوں روپے کیوں لیے گئے۔ وزارت کے کچھ لوگوں نے فرنٹ مین رکھے ہیں، اگر نوٹس نہ لیا گیا تو بعد میں لکیر پیٹتے رہیں گے اور سانپ گزر جائے گا

 سنیٹر چوہدری تنویر کا کہنا تھا کہ بہارہ کہو اسکیم کو آٹھ سال گزر گے صورتحال جوں کی توں ہے ٹھلیاں ہاؤسنگ اسکیم میں  پرائیویٹ پارٹی نے پلاٹوں کی بکنگ کے اشتہار میں وزیر اعظم کی تصویر لگائی ہے، کیا یہ سارا کام وزارت سے پوچھ کر کیا گیا ۔پرائیویٹ پارٹی کس حیثیت سے پیسے اکٹھے کر رہی ہے کیا کوئی لے آوٹ یا پلان منظور ہوا ہے ۔

جس پر جواب میں سیکرٹری ہاؤسنگ نے اشتہار سے متعلق لا علمی کا اظہار کیا کہ پی اے سی اراکین سیکرٹری ہاؤسنگ کے بیان پر شدید برہم ہوئے ۔خورشید شاہ نے کہا کہ آپ کی ناک کے نیچے اتنا بڑا اشتہار دیا گیا، آپ کہہ رہے ہیں مجھے علم تک نہیں۔ آپ نے کسی سے نہیں پوچھا کہ آپ کے نیچے اتنا بڑا منصوبہ کیسے بنا۔ آپ کی نا اہلی ہے  کہ کوئی ٹرسٹ بن گیا اورآپ کے علم میں نہیں ہے۔

 سیکرٹری ہاؤسنگ نے کہا کہ اپنے متعلق ریمارکس کو مسترد کر تا ہوں۔ میں نے اشتہار نہیں دیکھا۔ جس پر ممبران کمیٹی ششدر رہ گے۔ کمیٹی نے ہاؤسنگ اسکیم میں عوام کو سرمایہ کاری نہ کرنے کا انتباہ کرتے ہوئے ہاؤسنگ اسکیم کےاکاؤںٹس بند کرنے کی سفارش کردی۔

اس معاملے کی تحقیقات کیلئے اعظم سواتی کی سربراہی میں چار رکنی خصوصی کمیٹی تشکیل دیدی کمیٹی پندرہ دن میں معاملے پر پی اے سی کو رپورٹ پیش کرے گی۔ سماء

Housing Society

housing project

Tabool ads will show in this div