بھارتی جاسوسی رنگے ہاتھوں پکڑی گئی،پاک فوج کو ثبوت مل گئے ،تصاویراور وڈیو سے تصدیق

ویب ایڈیٹر    امبرین :


راول پنڈی : پاکستان کی جانب سے بھارت کے گرائے گئے جاسوس طیارے سے ناقابل تردید ثبوت حاصل کرلیئے گئے ہیں، حاصل شدہ ثبوتوں کے مطابق ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈری پر بھارت کی جانب سے فوجی نقل و حرکت اور زمینی جارحیت میں کئی گناہ اضافہ کیا گیا ہے، جب کہ حاصل شدہ ثبوت سے ثابت ہوگیا کہ طیارہ پاکستان کی جاسوسی کیلئے اڑا گیا تھا۔

مزید پڑھیں   :    جنگی جنون میں مبتلابھارت سب سےزیادہ ڈرون خریدنےوالاملک بن گیا

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر ) کے مطابق بھمبر میں گرائے جانے والے بھارتی ڈرون سے حاصل شدہ تصاویر اور وڈیو جاری کردیں، جس سے اس بات کی تصدیق کردی گئی ہے کہ پاکستان کی جانب سے گرائے گئے بھارتی جاسوس طیارے کو پاکستان کے خلاف خفیہ طور پر استعمال کیا جا رہا تھا،  تصدیق کے بعد بھارتی عزائم اور کرتوت کھل کر سامنے آگئے، یعنی ایک جانب تو امن کی آشا اور ملن کا راگ الاپا جاتا ہے تو   دوسری جانب ہیجانی  اور جنونی پاکستان مخالف کیفیت میں مبتلا بھارت بھرپور ازلی دشمن کا ثبوت بھی دے رہا ہے یعنی بغل میں چھری اور منہ پے رام رام۔

بھارتی جاسوس طیارہ پاکستانی علاقے میں داخل ہوا جسے پاک فوج نے بھمبر کے قریب مار گرایا جب کہ ڈرون سے حاصل شدہ تصاویراور ویڈیو میں واضح طور پر بھارتی فوج کا کمپنی ہیڈکوارٹرز اور بھارتی چیک پوسٹ پر لگا ہوا جھنڈا اور بھارتی فوج کی موجودگی نظر آرہی ہے، اس کے علاوہ تجزیئے سے بھی ثابت ہوا کہ یہ جاسوس طیارہ خرید کر بھارتی مواصلاتی کمپنی میں لے جایا گیا۔

On    arrival    in  forward    areas    shows   Coy   HQ    of    Indian    Sector

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے بھارتی ڈرون سے حاصل کردہ ڈیٹا کا تجزیہ مکمل کر لیا گیا ہے۔ جاسوس طیارہ بھارت سے آیا تھا۔ ترجمان کے مطابق بھارت نے 9 جون سے اب تک 35 مرتبہ ورکنگ باؤنڈری کی خلاف ورزی کی اس دوران ایل او سی اور ورکنگ باونڈری پر بھارت کی جارحیت میں بھی اضافہ ہوا جس میں متعدد بار معصوم شہریوں کو نشانہ بنایا گیا۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ بھارت کی جانب سے فضائی حدود کی خلاف ورزیوں میں بھی اضافہ ہوا ہے اور بھارتی افواج کی نقل و حرکت اس کے جارح عزائم کی نشاندہی کرتی ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ثبوت فراہم کرنے کے باوجود بھارتی حکومت نے جاسوس طیارے کی ملکیت سے انکار کیا ہے، تصاویر میں بھارتی فوج کی موجودگی صاف نظر آرہی ہے، فارنزک شواہد کے مطابق ڈرون نے آٹھ سے پندرہ جولائی 2015 کے دوران مختلف علاقوں کی جاسوسی کی اور چوکی کی تصویر بھی کھینچی جب کہ ان ناقابل تردید فارنزک شواہد کی آزاد ذرائع سے تصدیق بھی کی جاسکتی ہے.

یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاک فوج کی جانب سے گرایا گیا بھارتی جاسوس طیارے نے پندرہ جولائی کو مقبوضہ کشمیر کے جوڑیاں سیکٹر اڑان بھری، تصاویر اور فوٹیج کی روشنی میں طیارہ مقبوضہ کشمیر میں قائم انتہائی حساس بھارتی پوسٹ سے اڑا۔ ریکارڈ کے مطابق بھارتی فرم "میسرزایس کام" نے یہ جاسوس طیارہ خریدا، طیارے سے ایک بھارتی فوجی کی تصویر بھی حاصل ہوئی۔ سماء

PUNJAB

KHALISTAN

CHECK POST

ESPONGE

LINE OF CONTROL

GURDASPUR

AZAD

OCCUPIED

HELD

Tabool ads will show in this div