فاٹا،وفاقی کےماتحت اسکولزمیں قرآن کی تعلیم لازمی قرار

Quranاسلام آباد : فاٹا اور وفاقی دارالحکومت کے تحت چلنے والے اسکولوں میں قرآن پاک کی تعلیم کو لازمی قرار دیا گیا ہے، بل  وزیر مملکت برائے تعلیم و پیشہ ورانہ تربیت انجینئر بلیغ الرحمان کی جانب سے پیش کیا گیا۔ بدھ کو ہونے والی قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزیر مملکت برائے تعلیم و پیشہ ورانہ تربیت انجینیر بلیغ الرحمان نے قرآن پاک کی تعلیم لازمی قرار دینے کیلئے بل 2017ء قومی اسمبلی میں پیش کردیا۔ بل کے تحت فاٹا اور وفاقی حکومت کے ماتحت چلنے والے اسکولوں میں قرآن پاک کی تعلیم کو لازمی قرار دیا جائے۔ بل کو قومی اسمبلی میں متفقہ طور پر منظور کرلیا گیا ہے، بل کے تحت کلاس پہلی سے پانچویں تک ناظرہ قرآن کو لازمی قرار دیا گیا ہے، جب کہ جماعت چھٹی سے بارویں تک تمام مسلمان طالب علموں کیلئے قرآن پاک کے آسان ترجمے کو لازمی قرار دیا ہے۔ اس موقع پر مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے ارکان قومی اسمبلی نے قومی اسمبلی سے قرآن پاک کی لازمی تعلیم بل 2017ءکی منظوری پر مبارکباد پیش کی گئی۔ وفاقی وزیر برائے مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی سردار محمد یوسف نے کہا ہے کہ قومی اسمبلی سے قرآن پاک کی لازمی تعلیم بل 2017ءکی منظوری پر مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ اس بل کی ضرورت تھی کیونکہ مسلمان بچوں اور بچیوں کے لئے قرآن پاک کی تعلیم انتہائی اہم ہے، چاروں صوبائی اسمبلیوں کو اس طریقہ سے اس بل کو پاس کرنا چاہئے تاکہ ملک بھر میں تمام تعلیمی اداروں میں ناظرہ اور حفظ قرآن پاک پڑھنے کے یکساں مواقع ملیں گے۔ ایم کیو ایم کے رکن شیخ صلاح الدین نے بھی قرآن پاک کی لازمی تعلیم بل 2017ءکی منظوری پر ایوان کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یہ نسل نو کے لئے خوش آئند ہے، ہم نے اپنی ذمہ داری کو پورا کیا ہے۔ جماعت اسلامی کے رکن قومی اسمبلی صاحبزادہ طارق اﷲ نے کہا کہ اس بل کی منظوری سے بڑی خوشی ہے، اس بل پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے۔ کشور ناہید نے کہا کہ اچھا بل پیش کرنے پر حکومت کے کردار کو سراہتے ہیں، توہین رسالت قانون پر مکمل طور پر عمل کیا جائے، توہین رسالت قانون میں کسی بھی قسم کی ترمیم کے حامی نہیں۔ قرآن پاک ترجمہ کے ساتھ پڑھنے سے بچوں کو اچھا مسلمان بننے میں مدد ملے گی۔ محمود خان اچکزئی نے کہا کہ خوشی کی بات ہے کہ ہم نے بچوں کے لئے قرآن پاک پڑھانا لازمی قرار دے دیا ہے۔ امیر اﷲ مروت نے کہا کہ آج تاریخی دن ہے، ایوان مبارکباد کا مستحق ہے، آج اہم بل منظور ہوا ہے۔ راجہ جاوید اخلاص نے کہا کہ موجودہ حکومت اور وزارت تعلیم کا احسن اقدام ہے۔ شاہ جی گل آفریدی نے کہا کہ اس بل سے بچوں کو دینی تعلیم کے حصول میں مدد ملے گی۔ سماء

MUSLIMS

Holy Quran

Bill for compulsory education

Tabool ads will show in this div