سزائےموت پانےوالےبھارتی جاسوس کااعترافی بیان

KULBOSHAN ACCEPTANCE SOT 10-04

اسلام آباد: بھارتي جاسوس کلبھوشن ياديونے تين مارچ دوہزارسولہ ميں گرفتارہونے کے بعد پاکستان ميں اپني مجرمانہ سرگرميوں کااعتراف کيا۔ بھارتي جاسوس کا کہنا تھا کہ اس نے دوہزارتين اور دوہزارچار ميں کراچي کے دورے کيے اورجاسوسي کا آغازکيا۔

کل بھوشن نے اپنے بیان میں کہاتھاکہ دوہزارتين، دوہزارچارميں کراچي کے دورے کئے۔ کلبھوشن ياديونےکہاکہ ان دوروں کا مقصد راکيلئے بنيادي ٹاسک کوپورا کرناتھا۔

بھارتي جاسوس نےبتایاتھاکہ دوہزارتيرہ کے آخرميں اس کوراميں شامل کرلياگيا۔ اس نے مزید بتایاکہ دوہزارتيرہ سے بلوچستان اورکراچي ميں کارروائياں کرتا رہاہوں۔

بھارتي جاسوس نےکراچي ميں امن وامان کي صورتحال بھي خراب کرائي۔اس کوبلوچ باغيوں سے ملسل رابطے رکھنے کا ٹاسک ملا۔اس کی بلوچ باغيوں کيساتھ کارروائياں مجرمانہ تھيں۔يہ کارروائياں قومي سالميت کيخلاف اوردہشت گردي کے حوالے سے تھيں۔

کلبھوشن ياديونےمزید بتایاتھاکہ رابلوچ لبريشن موومنٹ کي کارروائيوں ميں ملوث ہے۔را بلوچ باغيوں کو فنڈنگ کرتي ہے۔ان کارروائيوں کا مقصد عام شہريوں کوقتل کرنا تھا۔ اس کوبلوچستان ميں ساحلي تنصيبات کو نقصان پہنچانے کاٹاسک ملا۔ سماء

raw agent

KulbhushanJadhav

Kalbushan

Tabool ads will show in this div