ایک اور انتہاء پسند وزیراعلیٰ

Extremist CM PKG 22-03 RAHEEL

نئی دہلی : سيکولر بھارت نے يو پی ميں ايسے انتہاء پسند کو وزيراعلیٰ بناديا جس کے سامنے ڈونلڈ ٹرمپ اور نريندر مودی تو فرشتے نظر آئيں گے۔

گجرات کے قصاب نے يو پی کے بلوائی کو وزيراعلیٰ بناديا، يوگی ادتيا ناتھ بابری مسجد شہيد کرنے والوں ميں شامل تھا جبکہ وہ تاج محل پر قبضے کی کوشش کرچکا ہے، ساتھ ہی بالی ووڈ اسٹارز شاہ رخ خان اور عامر خان کو بھی دھمکياں ديں۔

دہشت گرد سوچ، مسلمانوں پر حملے، اقليتوں کو کچلنے اور زبردستی مذہب تبديل کرانے کی کوششيں، مودی کے راج ميں انہی خصوصيات پر مکھ منتری بنايا جاتا ہے۔

یو پی ميں وزيراعلیٰ بنايا گيا شخص يوگی ادتيا ناتھ بابری مسجد کی شہادت ميں پيش پيش رہا، اس نے شارخ خان اور عامر خان کو دھمکياں ديں، مسلمانوں کے قبرستان پر قبضے، مساجد اور مزارات کو نذر آتش کرايا۔

نامزد وزیراعلیٰ پاکستان پر حملے کے مشورے اور تاج محل پر قبضے کی کوشش بھی کرچکا۔ ادتيا ناتھ نے کہا تھا تاج محل مندر کی زمين پر بنايا گيا ہے، مسلمان نوجوان کو قتل کرانے کے الزام ميں جيل کاٹنے کے علاوہ یوگی ادتيا ناتھ کے جرائم اور منتازع بيانات کی ايک لمبی فہرست ہے۔ سماء

UP

MUSLIM

Hindu Exteamist

Tabool ads will show in this div