گلو بٹ کے نام کی شہرت سندھ اسمبلی میں بھی

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ

کراچی : سندھ اسمبلی میں آج دوسرے دن بھی حکومت اور اپوزیشن ارکان میں نوک جھونک جاری رہی، کبھی گلو بٹ کا تذکرہ چھڑ گیا تو کبھی نثار کھوڑو کی بات نے ماحول گرمائے رکھا۔

بات ہورہی تھی حلقہ بندیوں کی، شہریار مہر بیچ میں بولے تو شرجیل میمن کو غصہ آگیا۔

شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ عدلیہ نے کہا ہے کہ حلقہ بندیاں الیکشن کمیشن کرے گی حالانکہ یہ صوبائی معاملہ ہے۔

سانحہ لاہور کیخلاف قرار داد پیش کی گئی تو اپوزیشن لیڈر شہریار مہر نے اس کی حمایت تو کی لیکن ساتھ ہی یہ بھی کہہ دیا کہ قرار داد پیش کرنیوالے پہلے اپنے صوبے کی فکر کریں، جس پر صوبائی وزیر نثار کھوڑو نے کہا کہ کالا باغ ڈیم کیخلاف قرار داد پیش کرنے پر پنجاب والوں نے کہا کہ سندھ والے را کے ایجنٹ ہیں، تب تو سب چپ تھے۔

نثار کھوڑو کی بات پر اپوزیشن اراکین بینچوں پر کھڑے ہوکر احتجاج کرنے لگے، شرجیل میمن نے بھی نثار کھوڑو کا بھرپور ساتھ دیا، اسپیکر سراج درانی اراکین کو بیٹھنے کی تلقین کرتے رہے۔ سماء

سندھ

نام

Tabool ads will show in this div