چوہدری شجاعت کی حکومت،طاہرالقادری کےمابین مصالحت کی پیشکش

  ویب ایڈیٹر:


اسلام آباد : مسلم لیگ ق کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین نے حکوت اور طاہر القادری کے درمیان معاملہ ٹھنڈا کرانے اور مصالحت کی پیش کش کردی، اس موقع پر سماء سے خصوصی گفت گو میں چوہدری شجاعت حسین کا کہنا تھا کہ حکومت آگے بڑھے تو پُل کا کردار ادا کر سکتا ہوں۔

حکومت اور طاہر القادری کے درمیان معاملہ گھمبیر صورت حال اختیار کر گیا ہے، ایک طرف طاہر القادری کا کہنا ہے کہ فوج کے آنے تک میں طیارے سے باہر نہیں آؤں گا، جب کہ دوسری جانب وزراء کی فوج کا کہنا ہے کہ طاہر القادری نے عملاً طیارے کو ہائی جیک کرلیا ہے، طاہر القادری زیادہ عرضے طیارے کئ اندر نہیں رہ سکیں گے اور باہر آجائیں گے۔

معاملے کی نازکت اور صورت حال بھاپتے ہوئے مسلم لیگ ق کے سربراہ نے معاملے کی سنگینی کا اندازہ لگاتے ہوئے مصالحت کی پیش کش کردی ہے، چوہدری شجاعت حسین کا کہنا ہے کہ حکومت نے طاہر القادری کا طیارہ ہائی جیک کر کے لاہور بھیجا، طاہر القادری سے ٹیلی فون پر بات ہوئی ہے۔

چوہدری شجاعت کا مزید کہنا تھا کہ حکومت ہوش کے ناخن لے، حکومت پُرتشدد کارروائیوں کے بجائے مذاکرات کرے، طاہر القادری کے مطالبات جائز ہیں،حکومت کو ماننا چاہيے، حکومت چاہتے تو میں آگے بڑھ کر پل کا کردار ادا کر سکتا ہوں۔ واضح رہے کہ آج پیر کے روز علی الصبح طاہر القادری کو اسلام آباد ایئرپورٹ پر لینڈ کرنا تھا مگر معاملے کی نزاکت اور دیگر صورت حال کے پیش نظر حکومت نے علامہ طاہر القادری کے طیارے کا رخ اسلام آباد کے بجائے لاہور کی جانب موڑ دیا۔ سماء

کی

weekly

Tabool ads will show in this div