گورنرسندھ پھرکامیاب،حکومت،طاہرالقادری کےدرمیان مذاکرات کامیاب

ویب ایڈیٹر:


کراچی/لاہور : گورنر عشرت العابد خان نے ایک بار پھر اہم موقع پر کامیاب مذاکرات کرانے میں کامیاب ہوگئے، گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان نے چھ شرائط اور دیگر مذاکرات سے متعلق اہم کردار ادا کرتے ہوئے علامہ طاہر القادری کو طیارے سے باہر آنے پر رضا مند کرلیا۔

علامہ طاہر القادری پیر کا طیارہ علی الصبح اسلام آباد کی فضائی حدود میں داخل ہوا تو صورت حال کو بھاپنتے ہوئے انتظامیہ نے طیارے کا رخ لاہور کی جانب موڑ دیا۔

لاہور طیارہ پہنچنے پر ڈاکٹر علامہ طاہر القادری نے طیارے سے باہر آنے سے انکار کردیا، ان کا کہنا تھا کہ وہ حکومت اور انتظامیہ پر اعتبار نہیں کرسکتے، فوجی نمائندہ آنے تک وہ طیارے سے باہر نہیں نکلیں گے، دوسری جانب طیارے کی ایئر لائن ایمریٹس کی جانب سے بھی ڈاکٹر علامہ طاہر القادری کی طیارے میں دیر تک نشت پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔

طاہر القادری نے جہاں حکومتی ٹیم سے مذاکرات سے انکار کیا، وہی دیگر قومی رہنما بھی مذاکرات کامیاب کرانے کیلئے کود پڑے، کبھی شیخ رشید تو کبھی چوہدری شجاعت کی جانب سے مصالحت کا کردار ادا کرنے کا دعویٰ کیا گیا، مگر کامیابی کا سہرا گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان کے سر رہا۔

ڈاکٹر عشرت العباد خان نے ہنگامی طور پر صدر، وزیراعظم، چوہدری نثار علی خان اور وزیراعلیٰ پنجاب سے رابطہ کیا۔ گورنر سندھ نے معاملات سے متعلق صدر، وزیراعظم اور چوہدری نثار سے اس معاملات پر تبادلہ خیال کیا۔

سماء سے خصوصی گفت گو میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان کا کہنا تھا کہپاکستان عوامی تحريک کے کارکن ہر جگہ سڑکوں پر ہیں، معاملے پر وزیر داخلہ اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے بات ہوئی،وفاقی حکومت بھی معاملے کو جلد سے جلد حل کرنا چاہتی تھی۔

گورنر سندھ کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم سے رابطہ کر کے طاہرالقادری کے مطالبات پہنچائے، الطاف حسين کی ہدايت پر گورنر پنجاب سے رابطہ کیا، حکومت نے فراخ دلی کاثبوت دیا ہے۔ اس موقع پر علامہ طاہر القادری کا کہنا تھا کہ ڈاکٹرعشرت العباد کے کہنے پر گورنر پنجاب کے ساتھ جانے کو تیار ہوں۔ سماء

nuclear

Tabool ads will show in this div