فوجی عدالتوں کامعاملہ قانونی مشاورت سے حل کرنیکا فیصلہ

Mar 04, 2017

P29graphic

اسلام آباد : فوجی عدالتوں کو توسیع دینے کے معاملے پر پاکستان پیپلزپارٹی کی آل پارٹی کانفرنس میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ معاملے کو قانونی طریقوں سے حل کیا جائے گا۔ فوجی عدالتوں کے معاملے پر اسلام آباد میں ہونے والی پاکستان پیپلزپارٹی کی آل پارٹیز کانفرنس میں مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف کے علاوہ تمام سیاسی جماعتوں نے شرکت کی۔

کانفرنس زرداری ہاؤس اسلام آباد میں ہوئی، کانفرنس کی میزبانی سابق صدر زرداری اور بلاول بھٹو نے کی، کانفرنس میں جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان، عوامی نیشنل پارٹی کے صدر اسفند یار ولی ،مسلم لیگ ق کے صدر چوہدری شجاعت حسین، بی این پی عوامی کے سربراہ اسرار اللہ زہری، جمہوری وطن پارٹی کے آفتاب شیرپاؤ، پاکستان عوامی تحریک ،مجلس وحدت مسلمین اور متحدہ قومی مومنٹ کا وفد بھی شریک ہوا۔

172.16.22.9_07_20170304100232450

اے پی سی میں فوجی عدالتوں کے قیام میں توسیع کے معاملے اور اس سلسلے میں نئی مجوزہ آئینی ترمیم کے مسودے پر اتفاق رائے پیدا کرنے کی کوشوں پر بات چیت کی گئی۔

172.16.22.9_07_20170304100236196

ذرائع کے مطابق فوجی عدالتوں کے قیام میں توسیع پر تمام جماعتیں متفق ہیں، تاہم اس سلسلے میں وزیراعظم نواز شریف سے یقین دہانی لی جائے گی کہ فوجی عدالتوں کی مدت ختم ہونے سے پہلے ٹھوس عدالتی اصلاحات کرلی جائیں تاکہ دوبارہ فوجی عدالتوں کی ضرورت نہ پڑے۔

کانفرنس کے اختتام میں بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ فوجی عدالتوں کی حمایت کا فیصلہ قانونی مشاورت سے کرینگے، نیشنل ایکشن پلان پر عمل نہ کرنا حکومتی نا اہلی ہے۔ سماء

BILAWAL BHUTTO

ASIF ZARDARI

FAZL UR REHMAN

MILITARY COURT

Tabool ads will show in this div