ای سی اواجلاس؛رکاوٹیں دور کرنا ہوں گی

ECO Meeting Ptv 28-02

اسلام آباد: مشیر خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا ہے کہ خطے کو دہشتگردی سمیت مختلف چیلنجز کا سامنا ہے۔ ارکان ممالک سمجھ لیں، باہمی تجارت میں حائل رکاوٹیں دورکرنا ہوں گی۔

پاکستان کو عالمی برادری میں تنہا کرنے کی بھارتی سازش پھر ناکام ہوگئی۔اسلام آباد میں اقتصادی تعاون تنظیم کی وزارتی کونسل کے اجلاس میں ایران اور ترکی سمیت دس ملکوں کے وزرائے خارجہ کی شرکت نے یہ بات ثابت کردی۔ اجلاس میں مشیرخارجہ سرتاج عزیز کو ای سی او کی وزراتی کونسل کا چیئرمین منتخب کرلیا گیا۔

اسلام آباد میں اقتصادی تعاون تنظیم کی وزراء کونسل کے اجلاس سے خطاب کے دوران مشیرخارجہ سرتاج عزیزکا کہنا تھا کہ خطے کو دہشتگردی سمیت مختلف چیلنجز کا سامنا ہے۔ خطے میں امن و استحکام کے لیے ای سی او اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔ رکن  ممالک کو باہمی تجارت میں حائل رکاوٹیں دور کرنا ہوں گی۔ ٹرانسپورٹ ،تجارت ،توانائی وسائل کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔ ای سی او میں پبلک پرائیوٹ شراکت بہتر بنانے اورتجارتی معاہدوں پر عمل درآمد میں رکاوٹیں دور کرنے کی ضرورت ہے۔

مشیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ اقتصادی راہداری سے ای سی او رکن ملکوں کو فائدہ ہوگا۔ انسانی وسائل کی ترقی پر بھی خصوصی توجہ دینا ہوگی ۔تنظیم کے لیے حلیل ابراہیم کی خدمات کوخراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

اجلاس سے خطاب کے دوران سیکریٹری جنرل ای سی او حلیل ابراہیم کا کہنا تھا کہ  اقوام متحدہ کے ساتھ پینتالیس معاہدوں پر تنظیم کے رکن ممالک دستخط کر چکے ہیں۔ تنظیم میں شامل ممالک نے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے باہمی تعاون کو فروغ دینے کا عزم کیا۔  سماٌء

sartaj aziz

ECO Summit

Tabool ads will show in this div