دہشت گردی کا کسی مذہب سے کوئی تعلق نہیں

Khawaja Asif 20-02

برلن : جرمنی کے شہر میونخ میں ہونے والی سیکیورٹی کانفرنس کے خصوصی سیشن میں گفت گو کے دوران وزیر دفاع خواجہ آصف برس پڑے، بولے مغرب کی پالیسیاں دہشت گردی میں اضافے کا سبب بنیں گی،دہشت گرد کا کوئی مذہب نہیں ہوتا۔

میونخ میں افغانستان سے متعلق ہونے والی اہم پریس کانفرنس میں خواجہ آصف نے اسلامک ٹیررازم کے لفظ کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔   وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ مغرب کی پالیسیاں دہشت گردی میں اضافے کا سبب بنیں گی، دہشت گردی کو کسی مذہب سے منسلک نہ کیا جائے۔ وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کو اگر صرف مسلمانوں سے جوڑنے کی کوشش کی گئی تو اس کے خلاف جنگ کبھی کامیاب نہیں ہوسکے گی۔   انہوں نے کہا کہ دہشت گرد مسلم، عیسائی یا ہندو نہیں صرف دہشت گرد ہوتا ہے، ٹرمپ کی ویزا پالیسی سے دہشت گردی کو بڑھاوا ملے گا۔ انتہا پسندی اور دہشت گردی سے متعلق سیشن میں خواجہ آصف نے مغرب کے مسلمانوں سے رویے اور ٹرمپ کی ویزا پالیسی کے نتائج سے بھی آگاہ کردیا۔ سماء

KHAWAJA ASIF

DEFENSE MINISTER

germany conference

Tabool ads will show in this div