پرویز مشرف، شوکت عزیز دور میں بطور ٹپ کروڑوں روپے کی ادائیگی

Feb 14, 2017

TIP Scandal 2400 Isb Pkg 14-02

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/02/TIP-Scandal-2400-Isb-Pkg-14-02.mp4"][/video]

اسلام آباد: عوام بنیادی ضروریات سے محروم، حکمرانوں کے شاہانہ انداز۔ پرویز مشرف اور سابق وزیراعظم شوکت عزيز کے بیرونی دوروں میں سرکاري کھاتے سے کروڑوں روپے ہوٹل ملازمین کو بخشش میں بانٹ دیئے گئے۔

آڈٹ حکام نے پرویز مشرف اور شوکت عزیز دور میں بطور ٹپ ادائیگیوں کا بھانڈا پھوڑ دیا۔ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں بتایا گیا تین سال میں ایک لاکھ چودہ سو ڈالر اور تین ہزار پاﺅنڈ ٹپ میں جھونک دیئے گئے۔ صرف انقرہ کے چار روزہ دورے میں ہوٹل ملازمین کو سات ہزار ڈالر کی بخشش۔

وزارت خزانہ اور دفتر خارجہ حکام کے مطابق ٹِپ کی رقم ادا تو قومی خزانے سے ہوتی ہے لیکن بلا رسید بلا ریکارڈ۔ پی اے سی کا اظہار برہمی، کہا رسید نہیں ہوتی ریکارڈ تو ہونا چاہیے۔ سماء

Audit

PERVEZ MUSHARRAF

Former PM

Shaukat Aziz

PAC meeting

Tabool ads will show in this div