ہحر ہند میں ہونے والی تبدیلیوں سے غافل نہیں رہ سکتے

172.16.22.9_07_20170211105328648 کراچی : سینیر مشیر خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا ہے کہ ہم بحر ہند میں تبدیلیوں سے لاتعلق نہیں رہ سکتے، پاکستان کی تجارت کا بڑا حصہ بحر ہند سے گزرتا ہے، جب کہ نیول چیف کا کہنا ہے کہ کوئی ملک سمندری راستے کو اکیلا محفوظ نہیں بنا سکتا۔ کراچی میں ساتویں بین الاقوامی میری ٹائم کانفرنس کا افتتاح ہوا جس کا اعلان مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کیا۔ انہوں نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میری ٹائم سیکیورٹی بحر ہند کے ملکوں کی سلامتی سے براہ راست تعلق رکھتی ہے۔ بحر ہند کا خطہ معاشی اور سیاسی طور پر انتہائی اہمیت اختیار کر گیا ہے ،بحری قذاقی سے نمٹنے کے لیے پاکستان دیگر ملکوں کے ساتھ کام کر رہا ہے ۔ مشیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان بحر ہند کا تیسرااہم ملک ہے ،خطے میں اہم تبدیلیاں ہو رہی ہیں ۔تقریباً 30ممالک بحرہند کے خطے سے جڑے ہیں ۔دنیا کی 40 فیصد تجارت بحر ہند سے گزرتی ہے۔آبنائے ہرمز ،اور ملاکا بحر ہند کے راستے کی اہم ترین گزر گاہیں ہیں ۔ مشیر خارجہ نے کہا کہ دنیا میں تیل و گیس کے 30 فیصد ذخائر بحر ہند کے خطے میں ہیں ۔ وسائل سے فائدہ اٹھانے کے لیےبحر ہند کا کلیدی کردار ہے۔ اس کو کشیدگی والے خطے کے بجائے امن والا خطہ بنانے کی ضرورت ہے۔ سماء

RUSSIA

sartaj aziz

PAKISTAN NAVY

admiral

ZakaUllah

joint military

Together for peace

Tabool ads will show in this div