اومنی گروپ کےمعاملےپررینجرزاورپولیس آمنے سامنے

OMNI GROUP KHI PKG 30-01 MEHROZ [video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/01/OMNI-GROUP-KHI-PKG-30-01-MEHROZ-.mp4"][/video]  

کراچی: اومني گروپ کے معاملے ميں سندھ پوليس اور رينجرز آمنے سامنے آگئے۔پوليس نے اسلحہ برآمدگي کے معاملے کو داخل دفتر کيا تو رينجرز نے اسے چيلنج کرديا۔

تئيس دسمبر دوہزار سولہ کو کراچي ميں اومني گروپ کے دفتر پر چھاپہ ماراگیا۔پوليس نے مقدمہ داخل دفتر کرديامگريہ کہاني کادي اينڈ نہيں تھا۔ سندھ رينجرز نے مقدمہ اے کلاس کرنے کي رپورٹ کو چيلنج کرديا ہے۔

کراچي پوليس نے چالان ميں بتايا کہ اومني گروپ کے دفتر پر چھاپہ مارا گيا۔اسلحہ، دستي بم اور گولياں برآمد ہوئيں جو کسي واردات ميں استعمال نہيں ہوئيں۔

رينجرز کے وکيل کي درخواست ميں کہاگياکہ اومنی گروپ کے دفتر سے ملنے والے دستی بموں کی جانچ اسلام آباد سےکرائی جائے۔ سماء

Omni

Tabool ads will show in this div