نہلے پہ دہلا؛ایک اورقطری خط آگیا

Jan 26, 2017

QATRI LETTER EX 26-01

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/01/Dosara-Qatri-Khat-PKG-26-01-SANA.mp4"][/video]

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں پاناما لیکس سے متعلق درخواستوں کی سماعت  کے دوران وزیراعظم کے صاحبزداوں حسن اورحسین نواز نے اپنا جواب سپریم کورٹ میں جمع کروا دیا۔ عزیزیہ سٹیل مل اور دبئی فیکٹری کی خریدو فروخت کی دستاویزات پیش کرنے کے ساتھ قطری خط پر اٹھنے والے سوالات کے جواب میں ایک اور خط عدالت میں جمع کروادیا گیا۔

قطری خط پراٹھنے والے سوالات کے جواب میں 22 دسمبرکو شہزادہ حمد بن جاسم کی طرف سے لکھا گیا ایک اور خط عدالت میں پیش کردیا گیا۔ شہزادہ حماد بن جاسم نے لکھا کہ میاں شریف کے میرے والد سے قریبی مراسم تھے۔ مجھے یہ بتایا گیا ہے کہ میرے خط پر متعدد سوال اٹھائے گئے ہیں،ان سوالوں کے جواب میں اپنا مؤقف پیش کر رہا ہوں۔

خط کے متن کے مطابق  میاں شریف نے 1980میں بارہ ملین درہم کی سرمایہ کاری کی تھی جو کہ نقدی کی شکل میں تھی۔ 2005 ممیں 80 لاکھ ڈالر کی رقم شریف خاندان کو واجب الادا تھی، رقم کی سیٹلمنٹ میاں شریف کی خواہش پر کی گئی۔ قطر میں کی گئی سرمایہ کاری کیش کی صورت میں تھی کیونکہ اس وقت قطر میں کاروبار نقد کی صورت میں ہی کیا جاتا تھا۔

خط کے متن کے مطابق دبئی اسٹیل مل بینکوں اور دبئی حکومت کے تعاون سے بنائی گئی۔

جواب میں قطری شہزادے کے کاروبار کی تفصیلات بھی فراہم کی گئی ہیں جس کے مطابق حماد بن جاسم کا کاروباردنیا بھرمیں پھیلا ہوا ہے۔ سماء

panama case

qatri letter

hammad bin jasim

Tabool ads will show in this div