اپوزیشن اورحکومتی ارکان یک زبان ہوگئے

Health Issuue In Pnj Assembly Lhr pKg 25-01

لاہور: پنجاب ميں صحت کے شعبے کي ابتر حالت حکومت اور اپوزيشن ارکان کو ايک پيج پر لے آئي، ن ليگي ايم پي اے ملک ارشد اور اپوزيشن ليڈر مياں محمود رشيد صورتحال سے مطمئن نہيں ۔

صحت کے شعبے کي بگڑتي صورتحال کے باعث پنجاب اسمبلي ميں اپوزيشن اورحکومتي ارکان يک زبان ہوگئے، چھوٹے شہروں اورديہات ميں مريضوں کے ساتھ کيا ہوتا ہے ساہيوال سے ن ليگ کے ايم پي اے ملک ارشد نے کچاچٹھا کھول ديا ۔

ايم پي اے ن ليگ ملک ارشد کا کہنا تھا کہ نہ کوئي ڈاکٹر اور نہ ہي کوئي مشينري صرف نرسيں اورڈسپنسرز کےسر پر ديہي مراکز صحت چل رہےہيں۔

اپوزيشن ليڈر محمودالرشيد نےبھي اس معاملے پرحکومت کو آڑھےہاتھوں ليا۔ انہوں نے کہا کہ دس اضلاع کےاسپتالوں ميں ايک بھي وينٹي ليٹرنہيں جبکہ لاہور کے چھ بڑے اسپتالوں ميں صرف پنتاليس وينٹي ليٹرز ہيں جبکہ ايمرجنسي ميں روزانہ گيارہ ہزار سے زائد مريض آتےہيں۔

وزيرصحت پنجاب خواجہ سلمان رفيق نےتسليم کيا کہ اسٹاف اورميڈيکل مشينري کي کمي ہے جسے پورا کرنے کي کوشش کي جارہي ہے۔ سماء

PUNJAB

PML N

PUNJAB ASSEMBLY

Tabool ads will show in this div