پنجاب میں کرپشن کی نئی کہانی

Saf Pani Embazlement Lhr Pkg 12-01

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/01/Saf-Pani-Embazlement-Lhr-Pkg-12-01.mp4"][/video]

لاہور : پنجاب میں کرپشن کی ایک اور کہانی سامنے آگئی، دیہی علاقوں ميں صاف پانی فراہم کرنے کا منصوبہ اربوں روپے کے گھپلے کی نذر ہوگیا، 121 ارب کا تخمينہ بڑھتے بڑھتے 191 ارب روپے تک پہنچ گیا۔

پنجاب ميں صاف پانی فراہمی کا منصوبہ 2014ء ميں شروع ہوا، پراجيکٹ 121 ارب روپے کا تھا ليکن حکام نے چالاکی دکھائی، مشينری کی خريداری کا مرحلہ آيا تو اچانک سے 70 ارب روپے بڑھادئيے گئے۔

منصوبے کے تحت جنوبی پنجاب ميں صاف پانی کے پلانٹس لگنے تھے، ليکن بيورو کريسی کی روايتی غفلت آڑے آئی اور 3 سال ميں صرف بہاولپور ميں 80 فلٹريشن پلانٹس لگائے جاسکے۔

منصوبے کیلئے مشينری کی خريداری ميں کرپشن سامنے آئی تو وزيراعلیٰ پنجاب نے صاف پانی کمپنی کے ايم ڈی وسيم اجمل سميت 3 ذمہ داروں کو معطل کرديا۔

صاف پانی کمپنی کے منصوبوں ميں کرپشن کی تحقيقات اينٹی کرپشن کے سپرد کردی گئی، ذرائع کے مطابق کمپنی کے مزيد افسران بھی بدعنوانی ميں ملوث ہيں، جن کے نام جلد سامنے آجائيں گے۔ سماء

PUNJAB

water filtration plant

Saaf Pani Company

Tabool ads will show in this div