اسلامی فوجی اتحاد کی سربراہی کیلئے آرمی چیف کی 3 شرائط

Amjad Shoaib 09-01

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2016/01/Amjad-Shoaib-09-01.mp4"][/video]

کراچی : جنرل (ر) امجد شعیب نے انکشاف کیا ہے کہ سابق آرمی چیف نے اسلامی فوجی اتحاد کی سربراہی کیلئے سعودی حکام کے سامنے تین شرائط رکھی تھیں۔

سماء سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے جنرل (ر) امجد شعیب کا کہنا تھا کہ سعودی حکام نے وزیراعظم نواز شریف سے بات کی تھی کہ جنرل راحیل شریف کو اسلامی فوجی اتحاد کا سربراہ بنایا جائے جس کی انہوں نے اجازت دیتے ہوئے کہا تھا کہ یہ پاکستان کیلئے اعزاز ہوگا۔

سابق فوجی افسر کا دعویٰ ہے کہ جنرل (ر) راحیل شریف نے اسلامی فوجی اتحاد کا سربراہ بننے کیلئے سعودی عرب کے سامنے 3 شرائط رکھی تھیں، پہلی شرط، ایران کو فوجی اتحاد میں شامل کیا جائے، چاہے وہ مبصر کی حیثیت سے ہی کیوں نہ ہو؟۔

مزید جانیے : راحیل شریف فوجی اتحاد کے سربراہ بنے یا نہیں، اسحاق ڈار کا نیا انکشاف

جنرل (ر) راحیل شریف کی دوسری شرط یہ تھی کہ وہ کسی کی کمان میں کام نہیں کریں گے، ایسا نہ ہو کہ اصل سربراہی کسی سعودی کمانڈر کے پاس ہو اور انہیں اس کے نیچے کام کرنا پڑے۔

سابق آرمی چیف کی تیسری شرط یہ تھی کہ انہیں مسلم ممالک میں ہم آہنگی پیدا کرنے کیلئے صلح کار کے طور پر کام کرنے کی اجازت ہونی چاہئے۔ سماء

RAHEEL SHARIF

FORMER COAS

Saudi Arab

NML

FORMER ARMY CHIEF

head of Islamic military alliance

Gen (r) Raheel Sharif

Amjad Shoaib

Tabool ads will show in this div