پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر انقلاب اورآزادی مارچ کا پڑاؤ،پکنک کاسماں

اسٹاف رپورٹ


اسلام آباد : انقلاب اور آزادی مارچ کے شرکاء کے ڈی چوک میں پڑاؤ کے باعث سرکاری ملازمین کے لئے دفتر پہنچنا مشکل ہوگیا۔

پارلیمینٹ ہاؤس کے سامنے سرسبز گرین بیلٹس پر لوگوں کا ہجوم جی ہاں! یہ آزادی اور انقلاب مارچ کے شرکاء ہیں جو تبدیلی لانے آئے ہیں، ان کی آمد سے حکومت یا ملک میں کوئی تبدیلی آئے نہ آئے، سرکاری ملازمین کیلئے تبدیلی ضرور آ گئی ہے اور وہ یہ کہ انہیں آج دو سے تین کلومیٹر پیدل چل کر دفاتر آنا پڑ گیا ہے۔

شاہراہ دستور پر آزادی اور انقلاب راج کے باعث پارلیمینٹ ہاؤس، سپریم کورٹ اور وزیراعظم سیکریٹریٹ سمیت تمام دفاتر کے راستے بند ہو گئے اور ملازمین کی مشکلات بڑھ گئی ہیں۔ سڑکیں بند ہونے کے باعث اکثر ملازمین دفاتر نہیں پہنچ سکے، جو پہنچے، انہیں پریشانی ہے کہ واپس کیسے جائیں گے۔

سرکاری ملازمین کا کہنا ہے کہ وہ ریڈ زون کے باعث پہلے مشکلات کا شکار تھے اوپر سے دھرنے والے آگئے۔ یہ سلسلہ لمبا ہو گیا تو ان کے لئے دفاتر پہنچنا ناممکن ہو جائے گا۔ سماء

کے

کا

western

Tabool ads will show in this div