ہاسٹل میں لڑکی کی پراسرار ہلاکت،دوست بھی مرگئی،نئے انکشافات

Naila Murder 0800 Pkg Moiz 04-01 حیدرآباد :  سندھ یونی ورسٹی ہاسٹل میں طالبہ کی پراسرار ہلاکت کا معاملہ نہیں سُلجھ سکا، دوست کی خبر ملتے ہی نائلہ کی دوست نسیمہ ملاح دل کا دورہ پڑنے سے دم توڑ گئی۔ حیدرآباد ڈسٹرکٹ بار نے شفاف تحقیقات کے لیے سندھ ہائی کورٹ سے کمیشن بنانے کی درخواست کر دی۔ دوست کی پراسرار ہلاکت کا غم برداشت نہ ہوا، سندھ یونی ورسٹی ہاسٹل میں طالبہ نائلہ رند کی دوست نسیمہ دنیا سے رخصت ہوگئیں۔ پولیس کے مطابق نسیمہ ملاح کو خبر سنتے ہی دل کا دورہ پڑا اور وہ دم توڑ گئیں۔ نائلہ کی موت آخر ہوئی کیسے؟ واقعہ کی تاحال پوسٹ مارٹم رپورٹ آئی نہ ہی مقدمہ درج ہوا، نائلہ کے بھائی کا کہنا ہے اُس کی بہن خودکشی نہیں کرسکتی۔ اس سے قبل آئی جی سندھ کی تحقیقاتی ٹیم نے ہوسٹل  کا ریکارڈ چیک کیا، طلبا کے بیانات قلمبند ہوئے، ہوسٹل ریکارڈ میں نائلہ کے فارم پر اصل کمرہ نمبر کاٹ کر اوپر36 نمبر لکھا صاف دیکھا جاسکتا ہے۔ نائلہ کی لاش بھی کمرہ نمبر 36 سے ملی تھی۔ سماء نے پہلے ہی سوال اٹھایا تھا کہ نائلہ کا کمرہ نمبر 36 نہیں تھا، کیا واقعی حقائق چھپانے کی کوشش کی جا رہی ہے؟؟ حیدرآباد ڈسٹرکٹ بار نے معاملے کی شفاف تحقیقات کے لیے  سندھ ہائی کورٹ سے کمیشن بنانے کی درخواست کی ہے۔ سماء

Sindh university

naila

mysterious death

Tabool ads will show in this div