متاثرین سیلاب کی مشکلات میں مزید اضافہ،امداد نہ ملنے پراحتجاج

اسٹاف رپورٹ

بدین: بدین میں سیلاب متاثرین کی مشکلات میں بھی کمی نہیں آ سکی۔ ریلیف کیمپوں میں موجود بے یار و مددگار متاثرین نے بھوک اور بدحالی سے تنگ آ کر احتجاج کا راستہ اختیار کر لیا ہے۔

 بدین میں بارش اور سیلاب کی تباہ کاریوں کو اب دو مہینے ہونے کو ہیں۔ دنیا بھر کی نظریں سندھ خصوصاً بدین کے متاثرین پر جمی ہوئی ہیں۔ حکومت اور منتخب نمائندے صرف فوٹو سیشن تک محدود ہیں۔ جس سے پریشان حال لوگوں کی مشکلات کم ہونے کے بجائے بڑھ رہی ہیں۔


متاثرین کی بڑی تعداد کیمپوں میں مقیم ہے۔ بہت سے لوگوں نے نہروں اور سڑکوں کے کنارے ڈیرے ڈال رکھے ہیں۔ انتظامیہ کو ملک بھر سے امدادی سامان ملا ہے۔ مگر وہ من پسند افراد میں بانٹ رہے ہیں۔

انتظامی لاپرواہی اور منتخب نمائندوں کی غیرموجودگی کے باعث متاثرین اب احتجاج پر مجبور ہیں۔ جیسے ہی ان کے سامنے امدادی سامان آتا ہے تو وہ اس پر حملہ کر دیتے ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت کو مصیبت کی اس گھڑی میں بدین کے متاثرین سیلاب کی مدد کے لئے تمام وسائل برائے کار لانے چاہئیں۔ سماء

میں

کی

tsunami

offers

palestinian

postponed

Tabool ads will show in this div