شاہراہ دستور شاہراہ انقلاب بنے گی، طاہر القادری

ویب ایڈیٹر

اسلام آباد : علامہ طاہر القادری کا کہنا ہے کہ ملک میں حقیقی جمہوریت کیلئے مظاہرہ کیا، شاہراہ دستور شاہراہ انقلاب بنے گی، سانحہ ماڈل ٹاؤن کی ایف آئی آر تاحال درج نہیں کی گئی، آج حکومت کے پاس کرپشن اور عیاشی کیلئے پیسہ ہے لیکن غریب عوام کیلئے نہیں۔

انقلاب مارچ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر علامہ طاہر القادری نے کہا کہ بہت جلد انقلاب کی خوشخبری ملنے والی ہے، ملک میں حقیقی جمہوریت کیلئے مظاہرہ کیا، پاکستانی تاریخ کا سب سے بڑا پُرامن مظاہرہ ہوا، شاہراہ دستور شاہراہ انقلاب بنے گی، قوم کو ظلم سے آزاد کرانے کا وقت آگیا۔

ان کا کہنا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کی اب تک ایف آئی آر نہیں کٹی، وکیل پہنچے تو پولیس اہلکار تھانے سے غائب ہوگئے، ایف آئی آر کی کاپی اب تک موصول نہیں ہوئی، وکیل ایف آئی آر کی کاپی حاصل کرکے مجھے بھیجیں گے۔

پی اے ٹی سربراہ کہتے ہیں کہ تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے کارکنان فرسٹ کزن ہیں، یہ دو سیاسی بھائیوں کی اولادیں ہیں، ایک طاہر القادری اور دوسرا عمران خان، عمر کے اعتبار سے طاہر القادری بڑا بھائی اور قد کے اعتبار سے عمران خان بڑے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ غلامی کی تاریک رات ختم اور آزادی کی صبح طلوع ہوگی، 10، 12 کروڑ غریب اپنے وطن میں جلا وطن ہیں، قائد اعظم نے پاکستانیوں کو ایک چیک دیا جس میں وعدہ کیا گیا کہ سب کو برابر کے حقوق ملیں گے،

کوئی بچہ تعلیم سے محروم نہیں رہے گا، کوئی بھوک سے نہیں مرے گا، غریب اور امیر سب کو صحت سمیت تمام بنیادی سہولیات ملیں گی۔

طاہر القادری کا کہنا ہے کہ آج قائد اعظم کا چیک باؤنس ہوگیا، پاکستان میں صرف حکمرانوں کیلئے بینکوں کے پاس پیسے ہیں، غریب عوام کیلئے نہیں، حکمرانوں کی عیاشیوں کیلئے پیسہ مل جاتا ہے، حکمران کے پاس بزنس بڑھانے اور کرپشن کیلئے پیسہ ہے، غریب عوام کيلئے نہیں، قائد اعظم کا چیک کیس کرانے، انصاف اور مساوی حقوق کیلئے یہاں آئے ہیں۔ سماء

western

Tabool ads will show in this div