مذاکرات کیلئے آنیوالی حکومتی کمیٹیاں بے اختیار ہوتی ہیں، طاہر القادری

ویب ایڈیٹر

اسلام آباد : علامہ طاہر القادری کا کہنا ہے کہ مذاکرات کیلئے آنیوالی کمیٹیاں بے اختیار ہوتی ہیں، حقیقی جمہوریت کیلئے جنگ پُرامن ہے۔

سماء کے اینکر علی ممتاز  سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر علامہ طاہر القادری نے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن پر ہمارے خلاف ہی ایف آئی آر کاٹ دی گئی، وزیراعلیٰ پنجاب نے تحقیقات پر مستعفی ہونے کا کہا تھا، جب تک شہباز شریف مستعفی نہیں ہوتے شفاف انکوائری نہیں ہوسکتی، پنجاب حکومت لاہور واقعے میں مکمل طور پر ملوث ہے۔

وہ کہتے ہیں کہ مذاکرات کیلئے آنیوالی حکومتی کمیٹیاں بے اختیار ہوتی ہیں، سیاسی جرگے نے مذاکرات بحالی کی درخواست کی، انصاف مانگنے والوں کو دہشتگرد کہا جارہا ہے، کئی سال گزر جاتے ہیں ملزمان کو سزائیں نہیں ملتیں، ایک ہی جوہڑ سے گدھے اور انسان پانی پیتے ہیں، کیا حق صرف پارلیمنٹ میں بیٹھے افراد کیلئے ہے۔

پی اے ٹی سربراہ نے کہا کہ حقیقی جمہوریت کیلئے اب پُرامن جنگ ہے، دھرنے والوں نے یلغار نہیں کی، چینی صدر کو سیکیورٹی فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے، حکومتی نااہلی کے باعث چینی سربراہ نہیں آئے، ہم نے چینی سربراہ کو نہ آنے کی دھمکی نہیں دی، ان کا بھرپور استقبال کیا جائے گا۔ سماء

پشاور

Narendra Modi

Tabool ads will show in this div