عمران خان ، طاہر القادری کیخلاف غداری کے مقدمے کے تحت کارروائی بنتی ہے،سعدرفیق

ویب ایڈیٹر:


اسلام آباد :  وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ عمران خان اور طاہر القادری عوام کو سول نافرنامی پر اکسا رہے ہیں، وہ معزز ایوان پارلیمنٹ پر چڑھائی کی کوشش کررہے ہیں، ایسی حرکات اور کارروائی کے تناظر میں  عمران خان کیخلاف آرٹیکل 6 کی کارروائی بن سکتی ہے۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب میں وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے جارحانہ انداز میں اننگ کا آغاز کیا، اظہار خیال کے موقع پر خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ملک میں نفرت کی ایک لہر پھیلائی جا رہی ہے، دو لوگوں کی سیاست کی بنیاد نفرت پر رکھی گئی ہے، ہماری سیاست میں خامیاں رہی ہونگی تاہم لوگوں میں سرعام نفرت کی آگ پیدا کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے، نفرت کی سیاست کرنے والے عوامی نمائندوں کا میڈیا ٹرئل کر رہے ہیں۔

وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ طاہر القادری نے کینیڈا کی روانگی سے قبل حکومت مخالف گولہ باری کی، انہیں تو انقلاب کی الف بے تک نہیں معلوم،ان پر تو اچانک منکشف ہوا کہ وہ امام انقلاب ہیں۔

طاہر القادری اور عمران خان کی جانب سے نازیبا الفاظ کے استعمال پر خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ کے باہر سیاست نہیں بد کلامی ہو رہی ہے، ملک میں ڈنڈے سے تبدیلی نہیں لائی جاسکتی، ملک میں ڈنڈے کے ذریعے تبدیلی لانے کی کوشش کی جا رہی ہے، انہوں نے تحریک انصاف کے چیئرمین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ عمران صاحب!ہم نہیں چاہتے آپ سیاسی طور پر ضائع ہو جائیں۔

انہوں نے کہا کہ ووٹر پوچھتے ہیں الزامات کا جواب کیوں نہیں دیتے، عمران خان کے اپنے صاحبزادے پاکستان سے باہر ہیں، عمران خان300کنال کی جگہ پر رہتے ہیں، عمران خان کنٹینر سے غائب ہو کر کہاں جاتے ہیں، عمران خان بنی گالہ جا کر کیا کرتے ہیں، عمران کے اپنے بیٹے وطن سے باہر اغیار کے ہاتھوں تربیت پا رہے ہیں، کسی کو اپنی کردار کشی کی قطعی اجازت نہیں دیں گے۔

خبروں کی زینت بننے والے نامعلوم ایمپائر کا ذکر کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق کا کہنا تھا کہ عمران خان کس کو ایمپائر کہتے ہیں، کپتان جس کو ایمپائر کہتے ہیں وہ نہیں آئیں گے، عمران خان اور طاہر القادری ملک کو پیچھے دھکیلنا چاہتے ہیں، پارلیمنٹ پر قبضہ کرنے کی کوشش کریں اور آپ کوشرم نہ آئے۔

انہوں نے کپتان کی جانب سے تیر اور نشتر کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ عمران خان کیخلاف آرٹیکل6 کی کارروائی بن سکتی ہے، عمران خان نے لوگوں کو سول نافرمانی پر اکسایا ہے، جس طرح دھرنے دیئے گئے ہیں، یہ جمہوریت نہیں، پارلیمنٹ کے باہر دھرنا نہیں بلکہ لشکر کشی ہے، طاہرالقادری نے اپنے کارکنوں کو تشدد پر اکسایا، ملک لاشیں اٹھانے کا متحمل نہیں ہوسکتا، دھرنے والوں نے 73 کے دستور پر حملہ کیا ہے۔

انہوں نے عمران خان سے درخواست کرتے ہوئے کہا کہ "عمران خان واپس لوٹ آئیں، ان کی شکست نہیں ہوگی، ملک عمران خان کی انا کے آگے چھوٹا پڑ گیا ہے"، سعدرفیق نے کہا کہ عمران خان مسلسل جھوٹ بول رہے ہیں، تسلیم کرتا ہوں مہنگے علاقے سے میں ہارا ہوں۔

خیبر پختونخوا کی صوبائی حکومت سے متعلق وفاقی وزیر ریلوے کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا میں پولیو کے کیسز میں اضافہ ہو رہا ہے، عمران ملک کے نظام کو جعلی کہتے ہیں اور خود اس کا حصہ ہیں، ڈی آئی خان جیل توڑنے پر تو وزیراعلیٰ نے استعفیٰ نہیں دیا، وزیراعلیٰ کے پی کے کابینہ کیساتھ ایک ماہ سے دھرنا جیل میں بند ہیں۔ سماء

کیخلاف

masters

عمران خان

Tabool ads will show in this div