راحیل شریف سب سے آگے سب سے پہلے

Raheel-Sharif

اسلام آباد: زخمی سپاہی ہو يا کوئی شہری مشکل ميں رہا جنرل راحيل شريف سب سے تيز سب سے آگے سب سے پہلے مدد کيلئے پہنچے اورسپاہيوں کو صرف ايک ہی آرڈر دیا کہ کوئی آرڈر نہيں ہے۔

جنرل راحيل شريف شہریوں کے ہر مشکل میں مدد کے لیے سب سے پہلے پہنچے ،عوام کا بس یہی کہنا رہا کہ اگرسپہ سالارراحيل شريف جيسا ہو دہشتگردی ہو، قدرتی آفت ہو، يا کوئی قومی مسئلہ ہو، لائن آف کنٹرول ہو يا کراچی ميں صورتحال آؤٹ آف کنٹرول ہو جنرل راحيل شريف فورا جا پہنچے۔

سپہ سالار نے اپنے سپاہيوں کو بھی سکھايا کہ عوام مشکل ميں ہوں توبس ايک ہی آرڈرہے کہ کوئی آرڈر نہيں، سانحہ صفورا ہو، کوئٹہ ميں دہشتگردوں کا حملہ ہوا، پشاورآرمی پبلک اسکول کا سانحہ عظيم ہو، يا بڈھ بيربيس پردشمن کی کارروائی ہو، جنرل راحيل شريف نے آگے بڑھ کر کمان سنبھالی۔

جنرل راحیل شریف نے ڈوبتے دلوں کو سنبھالا، ٹوٹتے حوصلوں کوسنبھالا، دہشتگردوں کو سزائيں دينے ميں ذرا نہ ہچکچائےکئی درندوں کی موت پر مہرثبت کردی، وزيردفاع خواجہ آصف کو جنرل راحيل کی جمہوريت پسندی بہت پسند آئی۔

فوجی جوانوں سے طلباء کے دلوں تک تيزی سے گھر کرنے والے جنرل راحيل شريف بہت سوں کی نظرميں رخصت بھی تيزی سے ہورہے ہيں۔ سماء

ARMY CHIEF

pak army

DG ISPR

ASIM SALEEM BAJWA

general raheel sharif

Tabool ads will show in this div